ریاست

خصوصی اہلیت نہیں رکھنے والے تھانہ داروں کی خیر نہیں

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 11-July-2019

پٹنہ : ریاست میں لا اینڈ آرڈر کو چست درست کرنے کیلئے پولس انتظامیہ لگاتار کوشاں ہے۔ اب خصوصی اہلیت نہیں رکھنے والے تھانہ داروں کو 31 جولائی تک ہر حال میں ہٹانے کاحکم پولس ہیڈ کوارٹر نے جاری کردیا ہے۔ اے ڈی جی لاء اینڈ آرڈر امت کمار نے سبھی آئی جی، ڈی آئی جی اور ایس ایس پی کوحکم دیاہے کہ تھانہ انچارج اور ایس آئی کیلئے جو اہلیت پورا کی گئی اس کی جانچ ایس پی کرلیں۔ فی الوقت ان کے ضلع کے تھانہ انچارج اس اہلیت کو پورا کررہے ہیں یا نہیں اگر جو بھی تھانہ انچارج یا ایس آئی اس اہلیت کو طئے نہیں کرتے ہیں تو انہیں عہدے سے ہٹا کراس کی رپورٹ 31 جولائی تک ہیڈ کوارٹر کو بھیجی جائے۔ جو اہلیت طئے کی گئی ہے اس کے مطابق اگر کسی تھانہ انچارج کے دائرہ کار میں شراب بنانا یا اس کی فروخت ، آپریشن یا استعمال میں ان کے ملوث ہونے کامعاملہ سامنے آتا ہے یا اس حلقہ کے تحت نشہ بندی میں ان کی جانب سے کوتاہی کی جارہی ہے تو اس پولس افسر کو اگلے دس برسوں تک تھانہ نچارج نہیں بنایاجائےگا۔ اس کے علاوہ جنہیں کسی واقعہ کی جانچ کے دوران پولس کے ذریعہ مجرم ٹھہرایاگیا ہو یا انہیں اخلاقی گراوٹ کے الزام میں محکمہ جاتی کارروائی میں قصوروار پایاگیا ہو یعنی خواتین سے نازیبا سلوک ، بدعنوانی اور سیکوریٹی میں کسی قسم کی کوتاہی پائی گئی ہو تو انہیں بھی اس کا قصوروار ماناجائے گا۔

About the author

Taasir Newspaper