ہندستان ہندوستان

انتھک محنت ، باریک تجزیاتی مشق اور خلوصِ نیت کے بغیر ہم سر سید کے خوابوں کی تعبیر نہیں تلاش کر سکتے

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 16-Oct-2019

علی گڑھ (پریس ریلیز) اکتوبر کا مہینہ صرف مسلم یونیورسٹی کیمپس کیلئے ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں آباد علی برادری کیلئے بھی حوصلوں اور امنگوں کا ہوتا ہے اور اسے ۱۷؍ اکتوبر کی آمد کا شدت سے انتظار رہتا ہے ۔ اس موسم میں مصلحِ قوم سر سید علیہ الرحمہ کے خوابوں میں رنگ بھرنے کا حوصلہ جاگتا ہے اور نونہالانِ ملت اپنی شخصیت اور قوم کی تعلیمی ترقی کے مختلف منصوبوں کو پایۂ تکمیل تک پہونچانے کا عزم کرتے ہیں۔ ان خیالا ت کا اظہار سابق صدر شعبۂ اردو پروفیسر صغیر افراہیم نے اسلامک اسٹڈیز سوسائٹی ، اے ایم یو کے زیرِ اہتمام ’’سر سید کے خوابوں کی تعبیر اور ہم‘‘ کے عنوان سے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ سر سید کی عظمتوں کا اعتراف دنیا کے تمام مفکر ین نے کیا ہے۔ انہوں نے علامہ اقبال کے ان احساسا ت کا ذکر کیا جو انہوں نے سر سید کی عظمتوں کے اعتراف میں منظوم کئے ہیں ۔ مہمانِ گرامی نے سر سید کی تعلیمی ، ثقافتی اور تاریخی سرگرمیوں کا حوالہ پیش کرتے ہوئے ’آثار الصنادید ‘کا بطورِ خاص ذکر کیا جس کے ذریعہ سر سید کا مؤرخانہ کردار واضح ہوتا ہے ۔ پروفیسر افراہیم نے کہا کہ اکیسویں صدی کے دور میں ہمیں اپنا احتساب اور جائزہ لینا چاہئے کہ آیا ہم سر سید کے مشن کو آگے بڑھا نے میں کسقدر سنجیدہ ہیں ؟ انہوں نے مزید کہا کہ انتھک ریاضت، باریک تجزیاتی مشق و ممارست اور خلوص نیت کے بغیر ہم کوئی علمی کام انجام نہیں دے سکتے اور نہ سر سید کے خوابوں کی تعبیر تلاش کر سکتے ہیں۔ پروگرام کا آغاز محمد ذیشان ، نائب صدر سوسائٹی نے تلاوت کلام پاک سے کیا۔ نظامت کے فرائض حبیب الرحمٰن سکریٹری سوسائٹی ایم اے سال اول نے بحسن و خوبی انجام دئے ، انہوں نے سوسائٹی کا تعارف کرایااور مہمانِ خصوصی کا تعارف بھی پیش کیا۔ کلمات تشکر نائب صدر سوسائٹی نے پیش کیے جس میں انہوں نے پروگرام میں موجود تمام سامعین کے علاوہ صدرشعبہ پروفیسر عبید اللہ فہد فلاحی، مہمانِ خصوصی پروفیسر صغیر افراہیم، صدر سوسائٹی ڈاکٹر اعجاز احمداور ڈاکٹر بلال احمد کٹی کا بطور خاص شکریہ ادا کیا اورپروگرام کو کامیاب بنا نے کیلئے سلیم شیخ، صالحہ فیض الحسن، شہاب ثاقب، محمد ناصر، ثمرین مرزا، عاتکہ سرتاج ، اکرم باللہ کی کی کی کوششوں کی ستائش کی۔ اس موقع پر صدرِ شعبہ، صدرِ سوسائٹی کے علاوہ اساتذہ، اسکالرز اور طلبا ء و طالبات کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔پروگرام کا اختتام سوسائٹی کے سکریٹری حبیب الرحمٰن کی دعا پر ہوا۔

About the author

Taasir Newspaper