سیاست سیاست

حکومت ہنر ہاٹ کی مدد سے لاکھوں افراد کو روزگار کے مواقع فراہم کرے گی: نقوی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 23-Oct-2019

نئی دہلی،(یواین آئی) اقلیتی اُمور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے آج نئی دہلی میں ایک بیان میں کہا کہ حکومت اگلے پانچ سالوں میں ہنرہاٹ کے ذریعے لاکھوں ہنرمندوں، دستکاروں اور روایتی ماہر باورچیوں کو روزگار اور روزگار کے مواقع فراہم کرے گی۔مسٹر نقوی نے آج کہا کہ اگلے ہنرہاٹ کا اہتمام یکم سے 10 نومبر 2019 کو ، اترپردیش کے پریاگ راج میں نارتھ سینٹرل زون کلچرل سینٹر میں کیا جائیگا جہاں ملک کے کونے کونے سے خواتین ہنرمندوں کی ایک بڑی تعداد سمیت 300 سے زیادہ ماسٹر ہنرمند اور ماہر باورچیوں کا گروپ شرکت کریگا ۔ تمام ہنرہاٹ 2019 اور 2020 میں منعقد کیے جائیں گے اور ان کاموضوع ایک ‘‘بھارت شریسٹھ بھارت’’ ہوگا۔ مسٹرنقوی نے کہا کہ ماسٹر ہنرمندوں کو روزگار اور روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے لئے ہنرہاٹ نے خود کو ایک مؤثر پروگرام کے طور پر ثابت کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈھائی لاکھ سے زیادہ ماسٹر ہنرمندوں ، دستکاروں اور ماہر باورچیوں کو گزشتہ تین سال میں نہ صرف روزگار فراہم کیا گیا ہے بلکہ انہیں روزگار کے مواقع بھی فراہم کیے گئے ہیں۔ ان میں خواتین کی ایک بڑی تعداد بھی شامل ہے۔مسٹر نقوی نے کہا کہ اقلیتی اُمور کی وزارت نے ملک بھر میں اگلے پانچ سال میں تقریباً 100 ہنرہاٹ کے اہتمام کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ماسٹر ہنرمند افراد اور ماہر باورچیوں کو روزگا ر کے علاوہ مارکٹ فراہم کی جاسکے اور روزگار کے مواقع بھی فراہم کیے جاسکیں۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں دلّی گروگرام ، ممبئی ، بنگلورو ، چنئی ، کولکاتا، لکھنؤ ، چنڈی گڑھ، امرتسر ، جموں ، شملہ ، گوا، کوچی، گوہاٹی، رانچی، بھوبنیشور، اجمیر اور دیگر مقامات میں ہنرہاٹ کا اہتمام کیا جائیگا۔مسٹر نقوی نے کہا کہ ہنرہاٹ میں شرکت کرنے والے دستکاروں، ہنرمندوں اور ماہر باورچیوں کو بااختیار بنانے کےعلاوہ ان ہنرمندوں کے ساتھ وابستہ کم از کم 40 سے 50 افراد کوبھی ہنرہاٹ کے ذریعے مالی طور سے فائدہ ہوا ہے۔ یہ ہنرمند افراد ہنر ہاٹ کے ذریعے اپنی گھریلو مصنوعات کے لئے قومی اور بین الاقوامی بازار حاصل کرتے ہیں۔مسٹر نقوی نے کہا کہ اقلیتی اُمور کی وزارت کی جانب سے ملک بھر میں لگائے جارہے ہنرہاٹ ماسٹر ہنرمند افراد اور دستکاروں کیلئے روزگار کے تبادلے اور بااختیار بنانے کا ذریعہ ثابت ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہنرہاٹ میک اِن انڈیا ،اسٹینڈ اپ انڈیا اور اسٹارٹ اپ انڈیا کے وزیراعظم کے عزم کو پورا کرنے کیلئے ایک قابل بھروسہ برانڈ بن گیا ہے۔ ہنرہاٹ ایک بھارت شریسٹھ بھارت کے عزم کو بھی مستحکم کررہا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper