ہندستان ہندوستان

ڈیفنس ایکسپورٹ پانچ سال میں 35 ہزار کروڑ کا ہوجائے گا:جنرل راوت

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 19-Oct-2019

نئی دہلی،(یو این آئی) آرمی چیف جنرل بپن راوت نے آج کہا کہ ملک میں دفاعی سیکٹر میں خودانحصاری بڑھانے اور دفاعی پیداوار کا اہم ایکسپورٹر بننے کی کوششیں رنگ لارہی ہیں اور اگلے پانچ سال میں دفاعی ایکسپورٹ کے 35 ہزار کروڑ تک پہنچنے کا امکان ہے۔جنرل راوت نے جمعہ کو یہاں دفاعی اتاشیوں کے چوتھے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مینوفیکچرنگ کے سیکٹر میں ملک کی دفاعی صلاحیت مسلسل بڑھ رہی ہے اور اس کے اگلے پانچ سال میں 35 ہزار کروڑ روپے تک پہنچ جانے کی امید ہے۔ انہوں نے کہا۔”ہم دھیرے دھیرے ایکسپورٹ رخی دفاعی صنعت بن رہے ہیں اور ہمارادفاعی ایکسپورٹ جو ابھی ایک سال میں 11ہزار کروڑ روپے ہے اگلے پانچ سال میں وہ 35 ہزار کروڑ روپے تک پہنچ جائے گا۔“انہوں نے کہا کہ یہ مایوس کن ہے کہ آزادی کے 70برس کے بعد بھی ہم بیرونی ملکوں سے فوجی ساز وسامان درآمد کررہے ہیں لیکن اب صورت حال بدل رہی ہے۔ ڈی آر ڈی او فوج کی ضرورت کے مدنظر رکھتے ہوئے سامان تیار کررہا ہے اور ان کی سپلائی کررہا ہے۔جنرل راوت نے کہا کہ ہندوستان پڑوس میں امن اور استحکام کے لئے عہد بند ہے اور فوج دوست ملکوں کے ساتھ مل کر کسی بھی نئے خطرے کا سامنا کرنے کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی فوج دنیا کی صرف تعداد میں ہی بڑے افواج میں شمار نہیں ہوتی بلکہ وہ اپنے تجربات، صلاحیت او رپیشہ ورانہ رویے کے لئے بھی مشہور ہے۔

About the author

Taasir Newspaper