بھوگائوں مین جمعہ کے روز سیکورٹی سخت رہی

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 28-Dec-2019

بھوگائوں ،مین پوری (حافظ محمد ذاکر )بروز جمعہ ضلع انتظامیہ کسی بھی طرح کی انہو نی سے نمٹے کیلئے کافی مستعد نظر آئی ، واضح رہے سی سے اے نئے ایکٹ کو لیکر پورے ملک میں افراتفری کا ماحول ہے ،اسی وجہ سے انتظامیہ ضلع مین چاک چوبند نظر آئی ،موصولہ اطلاعات کے مطابق کچھ روز قبل ضلع کے کچھ باثر شخصیات نے اعلیٰ افسران کے سامنے یہ وعدہ بھی کیا ہے کہ ہماری طرف سے کسی بھی طرح کا احتجاج نہ ہوگا ،پھر انتظامیہ کوئی لا پرواہی برتنا نہیں چاہتا ،آج قصبہ میں جامع مسجد کے پاس مدینہ مسجد و قصبہ کی دیگر مسجدوں کے پاس کافی تعداد میں پولس اہلکارکو تعینات کیا گیا ۔ موجود رہے، نماز جمعہ سے قبل قصبہ کے مسلم محلوں کا پولس کی اضافی نفری کے ساتھ گشت کیا گیا ، جامع مسجد پر معہ اضافی پولیس کے ساتھ نائب سپرنٹنڈنٹ اوم پرکاش سنگھ، ایس ڈی ایم پی سی آریہ، ڈی،ایس پی پریانک جین کے نماز سے دو گھنٹے قبل ہی موجود رہے۔ قصبہ میں سادہ یونیفارم میں تعینات پولیس فورس نے سماجی دشمن عناصر پر گہری نظر رکھی ، اسی دوران پولیس کے ہمراہ افسران نے شہر میں فلیگ مارچ کیا،اورقصبہ کی عوام کو اپنی موجودگی کااحساس کرایا ،مدینہ مسجد کے متولی جناب حاجی محمد اسحاق صاحب نے اپنے جمعہ کے خطبہ میں نئے ایکٹ کی نمازیوں کی تفصیلی معلومات دی ،اسی کے ساتھ قصبہ میں امن امان کو بر قرار رکھنے کی اپیل کی ،انہو نیں کہا احتجاج کرنا یہ ہماری قانونی حق ہے ،جو ہم سے کوئی چھین نہیں سکتا ،مگر احتجاج احتجاج کے دائرے میں ہو،سرکاری املاک کو نقصان پہنچانا گویا ایسا ہے جیسے ہم خود اپنا نقصان کر رہے ہوں ،سرکاری املاک کو نقصان پہنچانا قانوناً جرم ہے ،نماز جمعہ کے بعد حافظ محمد ذاکر اجتماعی دعاء میں ملک میں امن امان قایم رہنے کی دعاء کی ۔