سیاست سیاست

بی جے پی حکومت میں بچیاں بھی محفوظ نہیں : اکھلیش

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 03-Dec-2019

لکھنؤ:(یواین آئی) سماج وادی پارٹی(ایس پی) سربراہ و سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے اترپردیش میں نظم وضبط کے خستہ حال ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بی جے پی اقتدار میں بچیاں بھی محفوظ نہیں ہیں اور وہ بھی ظلم وبربریت کا شکار ہورہی ہیں۔مسٹر یادو نے پیر کو یہاں جاری بیان میں کہا کہ بی جے پی اقتدار میں خواتین اور بیٹیاں محفوظ نہیں ہیں۔ وہ گھر سے باہر نکلیں،پڑھنے جائیں،کسی تقریب میں شرکت کے لئے جائیں یا اپنی نوکر ی پر جائیں ان کے ساتھ سیکورٹی کا ڈر ساتھ ساتھ چلتا ہے ہر دن عصمت دری اور جنسی استحصال کے معاملے درج ہوتے ہیں۔ نابالغ بچیاں بھی اسی طرح سے ظلم کا شکار ہوتی ہیں۔کسی بھی مہذب سماج کے لئے یہ کافی تشویش کی بات اور قابل مذمت ہے۔انہوں نے کہا کہ اترپردیش میں تو حالات دن بہ دن خرات ہوتے جارہے ہیں ہر دن عصمت دری کے معاملات پیش آتے ہیں ۔بیٹی بچاؤ۔بیٹی پڑھاؤ کا جھوٹا نعرہ دینے والے اقتدار میں رہتے ہوئے بھی غیر انسانی واقعات پر قابو حاصل کرنے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں۔آج جنگل راج کا شکار اترپردیش میں ہر بیٹی خود کو غیر محفوظ محسوس کررہی ہے۔سابق وزیر اعلی نے کہا کہ سماج وادی حکومت میں خواتین سے چھیڑ چھاڑ کے حادثات روکنے کے لئے 1090 کی سروس کا آغاز کیا گیا تھا۔ اس نظام کو بی جے پی حکومت نے بند کردیا۔ جرائم کی روک تھام کے لئے ڈائل 100 کی سہولت تھی اس کو بھی بی جے پی حکومت کی جانب سے بدل کر 112 کر کے اس کو غیر مؤثر کردیا گیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper