سی اے اے اور این آرسی کے خلاف نکلےگا 19 کوجلوس

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 18-Dec-2019

سیتامڑھی (اشتیاق عالم) مدرسہ رحمانیہ مہسول سیتامڑھی میں قومی شہریت قانون اور این آرسی کے خلاف ایک اہم میٹنگ معنقد کی گئ جس کی صدارت معروف سماجی کارکن محمد جنید عالم نے کیا جس میں سیکڑوں موجود لوگوں نے اتفاق رائے سے یہ طے کیا کہ 19دسمبر بروز جمعرات بوقت 9بجے صبح سے مہسول آزاد چوک عیدگاہ کے نزدیک سے سی اے قانون اور این آر سی کے خلاف ایک عظیم الشان پرامن جلوس نکالنےکا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ جلوس آزاد چوک عیدگاہ کے نزدیک سے مہسول چوک، کارگل چوک راجوپٹی ہوتے ہوئے ڈومرا کلکٹریٹ تک جائے گی جس میں ضلع کے لاکھوں لوگ شریک ہونگے اس میٹنگ میں شرکت کرنے والوں میں محمد عارف حسین، محمد ہاشم مکھیا نمائندہ،محمد ارمان علی صدر مدرسہ رحمانیہ مہسول سیتامڑھی، محمد اسد،سلمان ساگر، محمد منا تسلیم، مولانا عبدالودود مظاہری ,الحاج اشرف علی، مولانا غلام رسول، محمد سلمان، محمد نوشاد عالم،ننھے انصاری مکھیا،محمد سہیل اختر ,صفت حبیبی، سکندر حیات، سید محمد احتشام، محمد علیم، معین مختار،مولانا ضیاء الرحمن قاسمی، محمد افروز عالم، محمد شمشاد، محمد علیم الدین، مولانا مشاہد انور قاسمی وغیرہ قابل ذکر ہیں۔معروف صحافی وناظم جامعہ عربیہ دارالعلوم کپرول مولانا محمد اشتیاق عالم نے ضلع کے عوام سے گذارش کی ہے کہ بڑی تعداد میں شامل ہوں اور اپنی آواز کو ایوان اقتدار تک پہونچانے کی بھرپور کوشش کریں تاکہ وہ کالا قانون واپس لیا جائے ۔ ادارہ شرعیہ سیتامڑھی کے قاضی ومفتی مولانا نورالہدیٰ خان رضوی مصباحی و مولانا اسلم القادری نے مشترکہ پریس بریفنگ کربتایا کہ آئندہ 19 دسمبر بروز جمعرات کو دن کے دس بجے سی اے اے اور این آر سی کے خلاف مہسول چوک سیتامڑھی سے ڈومرا ہوائی اڈہ میدان تک ایک پرامن احتجاجی جلوس نکالا جائے گا جس میں مسلمانوں کے علاوہ برادرانِ وطن بھی شرکت کریں گے اس لیے ضلع کے تمام مسلمان بھائیوں سے اپیل ہے کہ اس پر امن احتجاجی جلوس میں شرکت فرما کر اس آئین مخالف بل کی مخالفت کریں اور ڈی ایم سیتامڑھی کے توسط سے صدر جمہوریہ ہند تک اپنی آواز پہنچائیں۔