طلبا نے کالج گیٹ پر انتظامیہ کے خلاف دھرنا مظاہرہ کیا

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 17-Dec-2019

بتیا :(انیس الوریٰ)صوبہ میں بدحال تعلیمی انتظامات کا خامیازہ طلبا اور طالبات کو بھگتنا پڑرہا ہے ۔ جس کی وجہ سے طلبا دفتر کا چکر لگانے پر مجبور ہیں ۔ اب یہ تحریک کی شکل اختیا ر کر لیاہے عالم یہ ہے کہ وزیر اعلی نتیش کمار کو بھی اس مسائل سے روبرو کیا گیا تھا ۔ لیکن اس پر کوئی عمل نہیں کیا گیا ۔ جس سے پریشان طلبا نصف برہنہ حالت میں کالج میں دھرنا پر بیٹھ گئے ہیں ۔شہر کے گلاب میموریل کالج میں طلبا کالج انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے انٹرمیڈیٹ کے طلبا رجسٹریشن کرنے کا مطالبہ کیا ۔ جس کی رجسٹریشن ابھی تک نہیں ہوا اور کالج کے 502طلباکا رجسٹریشن بہار بورڈ کے ذریعہ کینسل کردیا گیا ۔ جس سے طلبا کافی مایوس ہیں ۔ طلبا نے ڈی ایم سے لیکر سی ایم تک اپنی بات رکھی لیکن ابھی تک کوئی کارروائی نہیں ہوئی ۔ جس وجہ سے طلبا کپڑے اتارکر مظاہر ہ کرنے پر مجبور ہیں ۔طلبا کا کہناہے کہ کالج میں موٹی رقم طلبا کا داخلہ لیا گیا لیکن امتحان کے وقت 502طلبا کا رجسٹریشن کینسل کردیا گیا ۔ طلبا نے بہار بورڈ کے چیئر مین انند کشور اور گلاب میموریل کالج انتظامیہ پر تانا شاہی رویہ اختیار کرنے کا الزام لگایا ۔ لڑکوں کا کہنا تھا کہ جب تک ان کا رجسٹریشن نہ ہوجاتا تب تک یہ مظاہر ہ جاری رہے گا ۔ پرنسپل نے کہا کہ فائل آگے بڑھ گئی ہے اس لئے جلد ہی سبھی لڑکے کا رجسٹریشن ہوجانے کی امید ہے ۔ پرنسپل نے اس معاملے میں بہار بورڈ کو قصوروار ٹھہرایا ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ بہار بورڈ کے ذریعہ ہر ایک سال اضافی سیٹ دیا جاتا تھا لیکن اس دفعہ بورڈ نے اضافی سیٹ نہیں دیا جس وجہ سے یہ پریشانی سامنے آئی ہے ۔