فڑنویس نے جامعہ کے طلباءکا فرضی ویڈیو جاری کیا

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 21-Dec-2019

ناگپور(یواین آئی)مہاراشٹر کے بی جے پی لیڈر و سابق وزیر اعلی دیوندر فڑنویس نے شہری ترمیمی بل میں احتجاج کے دوران جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباءکا فرضی ویڈیو ٹیوٹر پر اپ لوڈکیا ہے جس میں طلباءکو تشدد کی واردات میں ملوث ہوتے دکھلایا گیا ہے جو کہ حقیقت سے بالکل برعکس ہے۔ لہٰذا ان کے خلاف کاروائی کی جائے یہ مطالبہ آج یہاں کانگریس رکن اسمبلی ایڈوکیٹ یشومتی ٹھاکر نے ریاستی اسمبلی کے جاری سرمائی اجلاس کے دوران کیا۔پوائنٹ آف پروسیجر کے ذریعہ ایوان میں معاملہ پیش کرتے ہوئے یشومتی ٹھاکر نے کہا کہ فڑنویس ایک سینئر اور ذمہ دار لیڈر ہیں اور اس قسم کا فرضی ویڈیو جاری کرکے وہ انتشار پیدا کرنا چاہتے ہیں۔یشومتی ٹھاکر نے ایوان کو بتایا کہ فڑنویس نے یہ ویڈیو اپنے ٹیوٹر پر جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباءکا پر تشدد ہنگامہ کے نام سے جاری کیا ہے جو کہ سراسر غلط ہے اور حقیقی احتجاج اس کے مخالف تھا۔انہوں نے کہا کہ مہاراشٹرکا شمار ایک صنعتی ترقی یافتہریاست میں ہوتا ہے اور اس قسم کے فرضی ویڈیو سے ریاست کی شبیہ ملکی سطح پر خراب ہوگی اور بیرون ریاست صنعتی شہروں میں آنے والے سرمایہ کار متاثر ہوں گے۔یشومتی ٹھاکر نے مزید کہا کہ اس ضمن میں کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر اعلی پرتھوی راج چوہان نے اپنے ٹیوٹر پہ فڑنویس کے ایسے درجنوں دیگر فرضی ویڈیو بھی اپ لوڈ کیے ہیں جس سے حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔اخبار نویسیوں سے گفتگو کرتے ہوئے یشومتی ٹھاکر نے کہا کہ پورا ملک اس بات سے واقف ہے کہ کس طرح سے شہری ترمیمی بل پر احتجاج کرنے والے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے نہتے طلباءکو نشانہ بنایا گیا اور سرکاری اختیارات کا بے جا استعمال کرکے انہیں زدو کوب کیا گیا۔