ریاست

مسلم سماج میں بھی معاشرتی انصاف کی تحریک زوروں پر :اشوک کمار

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 02-Dec-2019

سہسرام :(انجم ایڈوکیٹ )یکم دسمبر پسماندہ سماج کسی کے کھونٹے سے باندھا نہیں کسی کو بھی اسے ٹیکین فار گرانٹیڈ نہیں لینا چاہئے ۔ یعنی ہمارے ساتھ رہیں گے نہیں تو جائیں گے کہا ایسے ہمارے سماج کے بارے میں کسی بھی مغالطہ نہیں پالنا چاہئے ۔ واضح ہوکے آل انڈیا پسماندہ مسلم سماج کے راشٹریہ صدرسابق ایم پی علی انور انصاری نے کہی ہے ۔ جناب انور نے آج یہاں مقامی اجلاس بھون میں منعقد ایک پروگرام کو خطاب کر رہے تھے ، انہوں نے کہا کہ بہار کا پسماندہ سماج بیدار ہوگیا ہے ۔ آبادی کے حساب سے اسے اقتدار ،اور انتظامیہ میں حصہ داری دینا ہوگا ،جناب انور علی نےیہ بھی کہا کہ محاذ شروع سے ہر طرح کی تنگ نظر ی اور فرقہ واریت کے خلاف لڑ رہا ہے ،اجلاس کی صدارت محاذ کے ضلع صدر اور نگر کمشنر گلریز انصاری نے کی آپریٹنگ یووا لیڈر شاہد علی نے کیا ۔ اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے بھارت سیوک سنگھ کے راشٹریہ صدر راکیش موریہ نے کہا کہ جب تک سبھی مذہبو ں کے پسماندہ یعنی پچھڑے ، دلت، طبقوں کے لوگ ایک ساتھ مل کر نہیں لڑیں گے تب تک ان سماجوں کو انصاف نہیں ملے گا ۔ اس موقع پر بام سیف کے ضلع انچارج اشوک کمار نے کہا کہ مجھے یہ سن کر بہت خوشی ہوتی ہے کہ اب مسلم سماج میں بھی معاشرتی انصاف کی تحریک زوڑ پکڑ رہی ہے۔ اجلاس کو محاذ کے سابق ریاستی صدر مختار انصاری نے کہا کہ یہ تحریک سماجی برابری اور اقتدار میں حصہ داری کےلئے لڑا جارہا ہے ۔ اس میں نوجوان نسل کو آگے بڑھ کر حصہ لینا چاہئے ۔ اجلاس کو مشہورشاعر اور سابق ٹیلی کام افسر نصراللہ منصوری ، ضلع کے سینئر لیڈر شنکر کشواہا اور محاذ کے ریاستی صدر پروفیسر تاج الدین منصوری نے بھی خطاب کیا ۔

About the author

Taasir Newspaper