مظاہرین پر پولیس کی بربریت کی ہوعدالتی جانچ:اجے کمار للو

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 23-Dec-2019

لکھنؤ:(یواین آئی) شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہورہے احتجاجی مظاہروں میں پولیس کی بربریت کی مذمت کرتے ہوئے اترپردیش کانگریس صدر اجے کمار للو نے اتوار کو کہا کہ پرامن طریقے سے احتجاج کرنے والے مظاہرین پر لاٹھی چارج اور فائرنگ کرنے والے خاطی افسران کے خلاف کاروائی و پورے واقعہ کی جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔کانگریس لیڈر نے یہاں جاری اپنے بیان میں الزام لگایا کہ پولیس اس احتجاج کو دبانے اور عوام کو خائف کرنے کے لئے سماجی و سیاسی کارکنوں کو غیر قانونی طریقے سے ان کے گھروں سے اٹھا رہی ہے۔انہوں سی اے اے اور این آر سی غریبوں اور محروموں کے خلاف گردانتے ہوئے کہا کہ آئین کو بچانے کے لئے سچ اور عدم تشدد کے راستے تحریک چلائے جائیگی۔مسٹر للو نے ریاستی گورنر کے نام لکھے اپنے خط میں کہا کہ گذشتہ کئی دنوں سے شہریت ترمیمی قانون اور این آر سی کے خلاف طلبہ سے لے کر عام شہری ،سماجی تنظیمی و سیاسی پارٹیاں پرامن طریقے سے احتجاج کررہی ہیں لیکن پولیس اپنی بربریت کا مظاہرہ کر کے ان کی آواز کو دبانےاور مظاہرے کو پرتشدد بنانے کی کوشش کررہی ہے۔جس کی وجہ سے ریاست میں لااینڈ آرڈر کا مسئلہ پیدا ہوگیا ہے۔احتجاج کے دوران پولیس پر جماعت سات کے طالب پر فائرنگ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اب تک ریاست میں درجنوں سے زائد افراد کی موت ہوچکی ہے اور سینکڑوں کی تعداد میں زخمی ہوئے ہیں ہزاروں افراد کو گرفتار کر کے جیل بھیجا گیا ہے۔