آنگن باڑی کارکنوں کی اہلیت میں اضافہ

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 10-Jan-2020

گیا/ : شہر کے جئے پرکاش نارائن اسپتال کے آڈیٹوریم میں انٹیگریٹڈ چائلڈ ڈویلپمنٹ پروجیکٹ کے کامن ایپلی کیشن سوفٹ ویئر پر ریفریشر پروگرام کے تحت خواتین سپروائزر اور آنگن باڑی کارکنوں کو تربیت دی گئی۔ تربیت کا مقصد آنگن باڑی کارکنوں اور خواتین سپروائزر کی استعداد کار میں مزید اضافہ کرنا ہے۔ اس سے کامن ایپلی کیشن سوفٹ ویر کے ذریعہ آنگن باڑی سرگرمیوں کی آن لائن رجسٹریشن میں تیزی آئے گی۔ نیز، آنگن باڑی کی تمام سرگرمیوں کو موبائل میں واضح طور پر ریکارڈ کرنے سے، اس کی نگرانی بھی آسان ہوجائے گی۔ خواتین سپروائزر اور آنگن باڑی ملازمین کی یہ ایک روزہ تربیت مختلف بیچوں میں 6 جنوری سے شروع ہوکر 9 جنوری کو اختتام پذیر ہوگی۔ چار روز تک جاری رہنے والی اس ورکشاپ میں، ضلع کے تمام منصوبوں سے 104 خواتین سپروائزر اور 176 آنگن باڑی ملازمین کو تربیت دی جارہی ہے۔ضلع کے تمام بلاکوں سے خادماؤں کو شامل کیا گیا:کیئر انڈیا کے ڈسٹرکٹ ٹیکنیکل آفیسر آؤٹ ریچ اور نیوٹریشن امت کمار نے بتایا کہ کامن ایپلی کیشن سوفٹ ویئر کے ریفریشر پروگرام کے تحت سابق تربیت یافتہ خواتین سپروائزرز اور آنگن باڑی کارکنوں کے موبائل پر آنگن باڑی سرگرمیوں کی ریکارڈنگ کے سلسلے میں ان کے کام پر پیشرفت اور پروگراموں کا جائز لیاجاچکا ہے۔ آنگن باڑی کارکنان اور خواتین نگراں اب موبائل پر تمام سرگرمیوں کو رجسٹر کرنے میں کافی ماہرہوچکی ہیں۔ اس سے بلاک سمیت ریاست اور مرکز کی سطح پر آنگن باڑی کے کام کی نگرانی کی جارہی ہے۔ اس تربیت میں ضلع کے 24 بلاکوں سے ایک ایک خاتون سپروائزر اور آنگن باڑی ورکر شامل ہیں۔تکنیکی طورپر بااختیار ہورہی ہیں کارکنان:آئی سی ڈی ایس ڈسٹرکٹ پروگرام آفیسر کسلیہ شرما کی ہدایت پر سی اے ایس ٹریننگ ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا ہے۔ انہوں نے محکمہ ملازمین کے ذریعہ فراہم کردہ موبائل میں آنگن باڑی مراکز کی سرگرمیوں کو باقاعدگی سے داخل کرنے کے بارے میں واضح ہدایات دی ہیں۔ اس سلسلے میں انہوں نے بتایا کہ مشترکہ سافٹ ویئر ایپلی کیشن کی مدد سے،آنگن باڑی کارکنان تکنیکی طور پر قابل ہو جائیں گی۔ موبائل ایپ کی مدد سے کام کو زیادہ معیاری انداز میں ریکارڈ کیا جاسکتا ہے۔ آنگن باڑی کے تمام مراکز کو موبائل مہیا کیا گیا ہے۔ ایپ کی مدد سے آنگن باڑی مراکز کے کام کی تازہ کاری کے بعد، آئی سی ڈی ایس سمیت، بلاک، ریاست اور مرکز کی سطح پر متعلقہ عہدیدار مانیٹرنگ کرسکیں گے۔

روزانہ آنگن باڑی کی سرگرمیاں اپ لوڈ کرنا: آئی سی ڈی ایس ڈسٹرکٹ کوآرڈینیٹر صبا سلطانہ اور ڈسٹرکٹ پروجیکٹ اسسٹنٹ شہلا ناز کی نگرانی میں کیا گیا۔ ڈسٹرکٹ کوآرڈینیٹر نے کہا کہ تمام تربیت یافتہ آنگن باڑی کارکنان اور خواتین سپروائزر کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ روزانہ آنگن باڑی مراکز کی سرگرمیاں اپ لوڈ کریں۔ ریفریشر پروگرام کی مدد سے اپنے کام کرنے کے طریقوں کا جائزہ لے کر، انہیں اپنی صلاحیت میں بھی اضافہ کرنا ہوگا تاکہ تمام سرگرمیاں 100 فیصد درست طریقے سے ریکارڈ کی جاسکیں۔ ریکارڈ شدہ معلومات کو ڈیش بورڈ کے ذریعے ریاست سمیت بلاک سطح، ضلعی سطح اور مرکز کی سطح پر متعلقہ عہدیداروں کو نگرانی میں آسانی ہورہی ہے۔