دلت، آدیباسی، پسماندوں اور اقلیتوں کے حقوق پر کوئی حکومت انگلی نہیں اٹھا سکتی : پاسوان

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 03-Jan-2020

پٹنہ : مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے سی اے اے ، این آر سی اور این پی آر پر ملک میں جاری احتجاجی مظاہرے اور اپوزیشن پارٹیوں کے ذریعہ اسے طول دینے کے درمیان آج کہا کہ اس معاملے میں عوام کو گمراہ کیا جارہا ہے۔ انہوں نے ایک ٹوئٹ میں کہا ہے کہ سی اے اے کے سلسلے میں پورے ملک میں منظم طریقے سے غلط فہمی پھیلائی جارہی ہے۔ وزیر اعظم نے بار بار کہا ہے کہ شہریت قانون ، شہریت دینے کیلئے ہے شہریت چھیننے کیلئے نہیں ہے۔ سی اے اے کا کسی ہندوستانی شہری کی شہریت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ پاکستان ، افغانستان یا بنگلہ دیش کے ہندو سکھ ،جین، بودھ، پارسی یا عیسائی جو 31 دسمبر 2014 سے پہلے بھارت میں رہ رہے ہیں۔ بھارت کی شہریت کے حقدار ہونگے۔ ملک کے مسلمانوں کو فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ جہاں تک این آر سی کاتعلق ہے اس پر ابھی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے اور اس کا کسی مذہب سے کوئی تعلق بھی نہیں ہے۔ کوئی بھی شخص مذہب کی بنیاد پر شہریت سے محروم نہیں ہوسکتا ہے۔ جہاں تک این پی آر کاسوال ہے یہ عام طور پر مردم شماری کاایک حصہ ہے۔