ریاست

سید نبیل نے دین کی تبلیغ کے لیے زندگی وقف کردی تھی: نور محمد حیدری

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 14-Jan-2020

مشرقی چمپارن( عاقب چشتی) پیر طریقت حضرت علامہ الحاج سید نبیل احمد شاہ حیدرالقادری کا شمار ریاست کے مشاہیر پیران عظام میں شمار ہوتا تھا اور آپ نے بیش بہا خدمات انجام دیے آپ نے پوری زندگی مذہب اسلام کی تبلیغ و ترویج میں گزاری اور سلسلۂ حیدریہ کے فروغ کے لیے ہمیشہ کوشاں رہے شمالی بہار میں درجنوں مدارس و مکاتب قائم فرمائے مذکورہ باتیں کیسریا جامع مسجد پرانی بازار کے زیر اہتمام منعقدہ محفل میلاد پاک سے خطاب کرتے ہوئے مولانا نور محمد حیدری نے کہی اور مزید بتایا کہ آپ کی ولادت با سعادت 19 دسمبر 1940ء کو کو حسن پورہ شریف ضلع سیوان میں ہوئی آپ کے والدگرامی خود جلیل القدر جید عالم ولی کامل تھے اور پورا گھرانہ اسلامی ماحول سے مزین تھا اس لیے آپ کی تعلیم و تربیت والدین کریمین کے سایۂ کرم میں ہوئی اور درس نظامیہ سے فضیلت کی سند و دستار حاصل کیا اور نہایت کم عمری سے ہی دینی سرگرمی میں حصہ لینے لگے ساتھ ہی نہایت سنجیدہ اور مخلص انسان تھے۔جبکہ مولانا نعمت اللہ جامعی نے کہا کہ پیر طریقت کا شمار ریاست کے مشاہیر علمائے کرام میں ہوتا تھا اور ملک کے کئی ریاستوں میں آپ کے مریدین و متوسلین کی اچھی خاصی تعداد موجود ہے اور آپ کے کارنامے آب زر سے لکھے جانے کے لائق ہیں۔جبکہ قومی ایکتا فرنٹ کے صدر وصیل احمد خان نے کہا کہ نبیل ملت خانوادۂ حیدریہ کے ایسے چشم و چراغ تھے جن پر ہم سب کو ناز تھا شریعت کے اصولوں پر سختی سے عمل پیرا تھے آپ نے دین و ملت کی جو خدمات انجام دیے یقینا وہ بے مثال ہے۔بعد نماز ظہر مدرسہ کے طلباء نے قرآن خوانی کی اور حیدری لنگر بھی تقسیم کیا گیا۔ تلاوت کلام پاک سے محفل کا آغاز ہوا اور کئی شعراء نے حمد و نعت پیش کیے نظامت کے فرائض قاری عبید رضا نے انجام دیے۔اس موقع سے جمیل اختر،نبیل احمد خان،ماسٹر اختر حسین،پپو خان،محمد نسیم،ناہید خان،کاشف خان، ماسٹر رحیم الدین،اشرف عالم سمیت سینکڑوں افراد موجود تھے۔

About the author

Taasir Newspaper