ریاست

ظالم ماں نےنوزائید معصوم بچی کوکھیت میں پھینکا

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 16-Jan-2020

سمستی پور (فیروز عالم) کڑاکے کی ٹھنڈ گزشتہ شب درجہ حرارت 4 ڈگری سیلسیس اس میں بھی زندگی جینے کی جنگ اور اس جنگ سے لڑنا کتنا مشکل ہوگا اسکا صرف اندازہ ہی کیا جا سکتا ہے،لیکن ایک معصوم نے اپنے پیدائش کے بعد وہ بھی بغیر کسی کپڑے تقریباً آٹھ گھنٹے ایک سنسان کھیت کھلی فضاؤں میں رہ کر زندگی اور موت سے مقابلہ کرتی رہی، اس معصوم ننھی پری کو پیدائش کے بعد ہی ایک کلیوگی ماں اور اسکے گھر والوں نے کھیت میں پھینک دیا۔وہیں سنگھیا گاؤں کے باشندہ دھورو ناراین شرما جب علی الصبح اپنے کھیت میں گئے تو دیکھا کہ ایک نوزائیدہ معصوم بچی کراہ رہے تھی،اسکے بعد انہوں نے اس معصوم بچی کو اٹھا کر اپنے گھر لے آئے،اور اسکو کپڑا پہنایا،اور اپنے ایک رشتہ دار روسڑا کا باشندہ کہنیا کمار کو بلا کر سونپ دیا،جیسے ہی اسکی پھنک سمستی پور چائیلڈ پروٹیکشن لائن کو ہوئی کہ فوراً روسڑا پہنچ کر نوزائیدہ کو اپنے قبضہ میں لیکر میڈیکل جانچ پڑتال کے لئے ممتا شیشو سنستھان کو سونپ دیا،ممتا شیشو سنستھان کے ملازم نے کہا کہ ایک کلیوگی ماں نے انسانیت کو شرمسار کرنے والی واردات کو انجام دیا اسکی جتنی بھی ننداکی جائے کم ہے،انہوں نے کہا کہ کبھی پیدائش دینے والی ماں بھی اسی طرح کے نوزائیدہ تھی۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper