ہندستان ہندوستان

فرقہ پرستوں سے لڑنے کیلئے ہمارے پاس ’’بھارت کا آئین‘‘ ہے: شری کانت سوامی

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 18-Jan-2020

بیدر۔(افسر علی نعیمی ندوی) ملک میں جس طرح کی اشانتی اور دہشت کا ماحول پیدا کیاجارہاہے اور یہ ہندوہے ، وہ جین ہے ، فلاں سکھ ہے ، یہ کرسچن اور وہ مسلمان ہے کہہ کر آپس میں خوف دلایاجارہاہے اور بھارت کادستورختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ، ایسے افراد سے لڑنے کیلئے ہمارے پاس ’’بھارت کا آئین‘‘ موجودہے۔ ہمیں دستور کوبچانا بھی ہے اور اسی کے حساب سے لڑائی بھی جاری رکھنی ہے۔ یہ باتیں سیکولرسٹی زنس فورم بیدر کے سینئر صدر شری کانت سوامی نے کہیں۔ وہ کل شب ڈیسنٹ فنکشن ہال بید رمیں بام سیف کے وامن مشرام کی جانب سے منعقدہ اجلاس عام سے بحیثیت مہمان خطا ب کررہے تھے۔ انھوں نے مزید بتایاکہ میں نے سابق وزیراعلیٰ سدرامیاسے کہاتھاکہ ہم لنگایت ’’اہند‘‘ یعنی اقلیت ، پسماندہ طبقات اور دلتوں کے ساتھ جڑنا چاہتے ہیں۔ کیونکہ ہمارامقصد مساوات ہے۔ لنگایت مذہب کے گروبسونا نے امن کیلئے کام کرنے کی بات کہی تھی۔ امن کو درہم برہم کرنے والوں کے خلاف انھوں نے لڑائی کرتے ہوئے جان دی ہے۔ شری کانت سوامی نے کنڑبنیاد بسونا کے وچن ہندی میں پڑھ کر سنائے ۔ کہاکہ کون ہے یہ نہ بولو، یہاں سب اپنے ہیں، میں اپنے گھر کی اولاد انہیں سمجھتاہوں۔ یہ ہندوہے ، جین ہے ، سکھ ہے ، کرسچن ہے ، مسلمان ہے نہ کہو، یہ سبھی پروردگارکی اولاد ہیں۔ موصوف نے کسی پارٹی کانام لئے بغیر کہاکہ ان لوگوں نے دیش میں اشانتی پھیلائی ہے اور سارے دیش کوآتنگ میں مبتلارکھنے کی کوشش کررہے ہیں۔ 2014سے انھوں نے صرف مسلمانوں کو نہیں بلکہ ہندوستان ہی کو ختم کرناطئے کیاہے۔ پھرایک وچن پیش کیا ۔ وچن میں لکھاتھا’’نہیں چاہیے نہیں چاہیے، کوڈلاسنگم توناراض ہوتاہے تو ہوجا، خداکی قسم بھگوان، سماج کے خلاف اور ملک میں آتنک پھیلانے والے ہمیں نہیں چاہئیے ‘‘ موصوف نے اس اجلاس میں بتایاکہ لنگا یت مہاسبھا نے فیصلہ کیاہے کہ ہم NRC-CAAکے خلا ف لڑیں گے۔ اگر کوئی اس فیصلے کے خلاف کرتاہے تو اس کو لنگایت سما ج سے نکال دیاجائے گا۔ 24؍جنوری کو گلبرگہ میں لنگایت مہا سبھا کی جانب سے ایک ریلی ہے جو صر ف لنگایت طبقہ پر مشتمل ہوگی۔ شری کا نت سوامی نے لنگایت دھرم کادستور ہند سے تعلق بتاتے ہوئے کہاکہ بھارت کا آئین ’’وچن ساہتیہ‘‘ پر مشتمل ہے۔ آخر میں یہ بڑی بات کہہ کر مسٹر سوامی نے اپنی بات ختم کی کہ بی جے پی اور آریس یس کو ختم کرنے کی ہم (لوگوں)نے قسم کھائی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper