لدھیانہ میں مختلف طلبہ کی جانب سے جے این یومیں حملہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 09-Jan-2020

لدھیانہ ( مستقیم ) آج یہاں شہر کی پاش علاقہ کپس مارکیٹ میں اناشیٹو آف چینج کی جانب سے شہر کے مختلف کالجوں اور اسکولوں کے طلبہ نے جے این یو میں ہوئے تشدد کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا ، اس موقعہ پر طلبہ کے ساتھ نائب شاہی امام مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی خاص طور پر موجود تھے ، لدھیانہ کی اسٹوڈنٹ آشی سنگھ نے اس موقعہ پر کہا کہ جے این یو میں جو کچھ ہوا ہے وہ بھارت کے اتہاس میں سیاہ دھبا ہے ، پولیس خاموش تماشائی بنی رہی اور نقاب پوش غنڈے ظلم کرتی رہی ، انہوں نے کہا کہ مودی سرکار اب جنرل ڈائر کی طرح سوچ رہی ہے کہ جنتا کو جیلاور پولیس سے ڈرا کر خاموش کر دیا جائے ، لیکن اب یہ ممکن نہیں کیونکہ یہ مسئلہ اب کسی ایک قوم کا نہیں بلکہ پورے بھارت کے لوگوں کا مسئلہ بن گیا ہے ،انہوں نے کہا کہ زمین پر کس ٹکڑے کا نام بھارت نہیں بلکہ ایک سو تیس کروڑ لوگوں کا نام بھارت ہے ، اسء دوران نائب شاہی امام مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی نے کہا جے این یو کے حق میں چل رہے اس مظاہرے میں شرکت فرمائی وہیں انہوں نے بتایا کہ کل رات کو ایک بہت بڑا کینڈل مارچ فیلڈ گنج چوک جامع مسجد سے جگرائوں پل تک نکالا جائیگا جس میں تمام مذاہب کے نمائدے شامل ہونگے اور سی اے اے این آر سی کے خلاف پرامن احتجاج کرتے ہوئے مارچ کرینگے ، انہوں نے کہا کہ مرکز کی حکومت عوام کو ڈرا نہیں سکتی ،حکومت کا مذہبی کارڈ فیل ہو گیا ہے اور اب ہر قوم اور نسل کے لوگ میدان میں ڈٹ گئے ہیں