سیاست سیاست

مظاہرین کو گولی مارنے کی دھمکی پردلیپ گھوش کے خلاف ایف آئی آر

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 15-Jan-2020

کلکتہ(یو این آئی) ترنمول کانگریس نے بنگال بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش کے خلاف ندیا اور شمالی 24پرگنہ میں دو ایف آئی آر درج کرائی ہے۔دلیپ گھوش نے گزشتہ دنوں ندیا ضلع میں کہا تھا کہ شہریت ترمیمی ایکٹ کے خلاف احتجاج کے دوران سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے والوں کو ”کتا کی طرح گولی ماریں گے“۔سینئر ترنمول کانگریس لیڈر و ریاستی وزیر جیوتری پریہ ملک نے کہا کہ پارٹی کارکنان نے گھوش کے متنازع بیان پر ایف آئی آر درج کرائی ہے۔ملک نے کہا کہ عام آدمی ان کے بیان سے خوف زدہ ہیں کہ کہیں احتجاج کرنے پر دلیپ گھوش گولی نہ ماردے۔اسی وجہ سے شمالی 24پرگنہ کے ہابرا میں ایف آئیآر درج کرائی گئی ہے۔ایک دوسری شکایت ندیا ضلع میں درج کرائی گئی ہے۔ندیا ضلع پولس نے کہا کہ ہمارے یہاں گھوش کے خلاف شکایت درج کرائی گئی ہے۔دلیپ گھوش نے اتوار کے دن رانا گھاٹ میں ایک جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ”شہریت ترمیمی ایکٹ کے خلاف بنگال میں احتجا ج کے دوران ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کرنے والوں کے خلاف بنگال میں نہ کسی پر گولی چلائی گئی، نہ ایف آئی آر درج کی گئی اور نہ ہی پولیس نے کسی کو گرفتا کیا ہے۔ جب کہ مظاہرین نے سرکاری املاک کو نقصان پہنچایا۔انہوں نے کہا کہ اترپردیش، کرناٹک اور آسام میں ہماری حکومت ہیں جہاں کتے کی طرح گولی ماری گئی ہے۔وزیر اعلی ممتا بنرجی نے بی جے پی کے ریاستی صدر کے بیان کی شدید مذمت کی تھی۔خیال رہے کہ دلیپ گھوش کے بیان کی مرکزی وزیر بابل سپریہ نے بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کے بیان کو سیریس نہیں لینا چاہیے اور یہ پارٹی کا موقف نہیں ہے۔

About the author

Taasir Newspaper