ہندوستان کا گوشہ گوشہ بنے گا شاہین باغ:سید محمد دایم

Taasir Hindi News Network | Uploaded on 23-Jan-2020

اورنگ آباد(پی آر)ضلع اورنگ آباد میں این آر سی ،سی اے اے اور این پی آر کے خلاف پانچویںدن بھی دھرنا اور احتجاج جاری رہا اور اس دھرنے میں مرد کے ساتھ ساتھ خواتین اور چھوٹے بچے بھی شامل ہوے ٔ۔اس موقع پر سید محمد دایم نے کہا کہ ہندوستان کا گوشہ گوشہ آنے والے کل میں دہلی کا شاہین باغ بن جاے گا۔ شاہین باغ کی ان تمام مائوں اور بہنوں کو سلام کر رہا ہے پورا ہندوستان جنہوں نے ہندوستان کے آیٔن کو بچانے کیلئے موسم کی پرواہ کیے بغیر ہمہ وقت دھرنے پر بیٹھی ہیں ۔اورنگ آباد میں بھی دھرنا اور احتجاج جاری ہے۔مرکزی حکومت کی نادانی کا نتیجہ ہے کہ آج لوگ اپنے اپنے گھروں سے نکل کر سڑکوں پر احتجاج کر رہے ہیں اتنا ہی نہیں بلکہ وہ بچے بھی اپنے ہاتھوں میں اس سیاہ قانون کے خلاف بینر لے کر کھڑے ہیں جنکی عمر ابھی کھیلنے کودنے کی ہے۔ہندوستان میں اگر یہ صورتِ حال پیدا ہوی ہے تو یقینا اس کیلئے مرکزی حکومت ذمہ دار ہے۔اس دھرنے میں شامل لوگوں نے یہ بھی کہا کہ ہندوستان کے آئین اور سنویدھان کی حفاظت کرنا ہندوستان میں رہنے والے ہر فرد پر لازمی ہے اور لوگ ایسا کر بھی رہے ہیںاور یہ اس وقت تک جاری رہے گا جب تک مرکزی حکومت اس سیاہ قانون کو واپس نہ لے ورنہ مرکزی حکومت کو یہ بات بھی اچھی طرح سمجھ لینی چاہیے کہ نصیحتیں نہ کرو عشق کرنے والوں کو یہ آگ اور بھڑک جا ے گی بجھانے سےحکومت نے اس سیاہ قانون کے ذریعے پورے ملک کی فضا کو بگاڑنے کی جو کوشش کی ہے وہ کوشش کسی صورت کامیاب نہیں ہوگی اور اس بات کو بہت حد تک ہندوستان کے لوگوں نے بہت حد تک ثابت بھی کیا ہے ابھی تک اور مستقبل میں یقینا اس سے زیادہ بہتر نتایج نکل کر سامنے آینگے۔اورنگ آباد کے لوگوں نے پٹنہ کے سبزی باغ اور گیا کے شانتی باغ کا حوالہ بھی دیا اور کہا کہ شاہین باغ نے جس تحریک اور جس عمل کی داغ بیل ڈالی ہے وہ آنے والے کل میں تاریخ کے سنہرے پنوں پر چاندی کی روشنایٔ سے لکھا جاے گا جسے تا قیامت تک مٹایا نہیں جا سکتا۔کلیم راحت نے وطن پرستی اور سیاہ قانون کے حوالے سے نو جوانوں کو جگانے کی کوشش کی اورکئی اشعار اس موضوع پر سنائے ساتھ ساتھ محمد اطہر نے بھی اپنے جذبات کا اظہار کیا۔