ریاست

آئین کو بچانے کیلئے خواتین کے حوصلے کو سلام :ظفر عالم

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 22-Feb-2020

بیگوسرائے : (محمد کونین علی )بلیا تھانہ حلقہ کے لکھمنیاں کے انقلابی چوک پر جاری قومی شہریت قانون ، این آر سی اور این پی آر کے خلاف غیر معینہ ضلع سطحی دھرنا سے خطاب کرنے سہرسہ ضلع کے سمری بختیار پور سے آر جے ڈی ایم ایل اےظفر عالم نے پہنچ کر اپنا تعاون پیش کیا ۔ انہوں نے کہا کہ آئین کو بچانے کےلئے ملک کو بچانے کےلئے آج جو قربانی ہماری ماں بہن دے رہی وہ قابل تعریف ہے ۔انہوں نے کہاکہ قانون سازیہ اسمبلی کے باہر ہم لوگ ہاتھوں میںتختیاں لیکر بہار حکومت پر دبائو ڈالتے رہے کہ اس سیاہ قانون کے خلاف تجویز پاس کریں ۔ لیکن اس پر کوئی رد عمل دیکھنے کو نہیں ملا ۔ ظفر عالم نے کہاکہ بھاجپا کےکچھ ایسے لیڈر ہیں جو کہتے ہیں کہ اگر یہاں کوئی بھاجپا مخالف جیتے گا تو پاکستان میں پٹاخے چھوٹیں گے ۔ ہم ایسا بیان دینے والوں سے پوچھنا چاہتے ہیں کہ آپ پاکستان کی اتنی فکر کیو ں کرتے ہیں ۔ آپ اس ملک کی فکر کریں ۔ ملک کے اندر بے روزگاری ، بد عنوانی ، وغیرہ کے متعلق فکرکریں ۔ اس موقع پر عصمت اللہ بخاری نے دھرنا سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ سی اے اے میں اختلاف کیا گیا ہے جان بوجھ کر ملک کو ہندو مسلم کے نظرے سے بانٹنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ جسےہم لوگ کبھی برداشت نہیں کریں گے ۔ اس ملک میں ہندو مسلم ساتھ ساتھ رہتے آئے ہیں اور ساتھ رہیں گے ۔ اس لئے ملک کو اس سیاہ قانون کی ضرورت نہیں ہے ۔ دھرنا کی صدارت باباصاحب ڈاکٹر بھیم رائو امبیڈر وچار سنگھرش منچ کے صدر محمد جاوید اختر اور نظامت محمد شاہد اقبال اطہر نے کیا ۔محمد جاوید اختر نے ریزرویشن کے مدعے پر 23تاریخ کو بھارت بند کو کامیاب بنانے کےلئے حمایت دینے کی اپیل کی ۔ دھرنا سے خطاب کرنے والوں میں بھیم سینا کے ضلع صدر پردیپ کمار ، ڈاکٹر ایس ایس آفاق ، وچار سنگھر منچ کےممبرو وارڈ کائونسلر محمد فروغ الرحمان ، فیض الرحمان ، محمد شاہد ، بھگت سنگھ ، یوتھ فائونڈیشن کے ضلع صدر محمد حسن ، وغیرہ نے خطاب کیا ۔

About the author

Taasir Newspaper