آئین کی حلف لیکر اقتدار میں آئی بھاجپا سرکار آئین کو ہی ختم کرنے میں لگی ہوئی ہے،بندنا

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 17-Feb-2020

سمستی پور(فیروز عالم)سی اے اے، این آر سی اور این پی آر)جیسے سیاہ غیر آئینی قانون کو واپس لینے کے مطالبے پر ضلع ہیڈ کوارٹر سے متصل سرکاری بس اسٹینڈ میں آئین بچاؤ سنگھرش سمیتی کے بینر تلے سمستی پور کے شاہین باغ میں 10 جنوری سے شروع غیر متعینہ ستیہ گرہ آج 38 ویں روز بھی مسلسل جاری رہا ستیہ گرہ سے خطاب کرتے ہو ئے لیڈی لیڈر بندنا سنگھ نے کہا کہ آئین کی حلف لیکر اقتدار میں آئی بھاجپا سنگھ سرکار آئین کو ہی ختم کرنے کے چکر میں لگی ہوئی ہے،انہوں نے کہا کہ آزاد بھارت میں پہلی بار آرٹیکل 14اور 15 کی دھجیاں اڑاتے ہوئے شہریت قانون مذہب کی بنیاد پر لایا جا رہا ہے،اسے عوام کبھی برداشت نہیں کرے گی،انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے اقتدار پر جب سے آر ایس ایس ،راشٹریہ سویم سیوک سنگھ، کے تخریبی نظریہ والی بی جے پی کا قبضہ ہوا ہے تبھی سے ملک میں فرقہ پرستی کو فروغ دینے والے فیصلے، بل اور قانون منظر عام پر آ رہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی ہر پالسی مسلم مخالف ہی نظر آتی ہے ،عظمی رحیم نے کہا کہ فرقہ پرستوں کے دشمن نمبر ایک مسلما ن ضرور ہیں لیکن یہ لوگ دلت، قبائلی، خاتون اور غریب کے بھی مخالف ہیں،انہوں نے کہا کہ حکومت اعلانیہ یہ کہہ رہی تھی کہ ملک بھر میں آسام کی طرز پر این آر سی کو نافذ کیا جائے گا اور اس سے پہلے سی اے بی ،شہریت ترمیمی بل، لایا گیا جو پارلیمان اور صدر کی منظوری کے بعد اب قانون ،شہریت ترمیمی ایکٹ، بن چکا ہے، جب آئین سے محبت کرنے والے لوگوں نے بی جے پی کے منشہ کو سمجھ گیا تو پر زور انداز میں اسکی مخالفت کرنے لگی،تب جا کر عوام کو گمراہ کرتے ہو ئے این پی آر لایا،اسکے باوجود آئین سے محبت کرنے والے ہندوستانی نہیں مانے تو انہوں نے پارلیمنٹ میں تحریری طور پر یہ کہا کہ ابھی ملک میں این آر سی نافذ نہیں کیا جائے گا،پپو خان نے کہا کہ سی اے اے اور این آر سی کا ملن اس ملک کیلئے کتنا خطرناک ہے یہ بات ہر کسی کو سمجھنے کی ضرورت ہے،اگر ہم لوگ ابھی نہیں سمجھے تو پھر ہماری نسلیں ہمیں کبھی معا ف نہیں کریگی، کیوں اس ظالم کا منشہ تو یہ ہے کہ ہندوستان کی جو گنگا جمنی تہذیب کی خوبصورتی ہے اسے ختم کیا جائے،موقع پر محمد شہنواز اصغر،شاد احمد،محمد روبید،محمد نوشاد،مسعود جاوید، خورشید عالم،نسیم عبد اللّٰہ،محمد حسین احمد ، زکی الحسن،انصار احمد ،مہیش پاسوان، رام ونود پاسوان، سنیل کمار،محمد مستقیم،محمد معرا ج،محمد جاوید، شبانہ شیخ،شہباز نیازی، جمشید احمد،پریتی کماری ،منیشا کماری، استو تی کماری،شبینا شیخ وغیرہ نے خطا ب کیا ، ستیہ گرہ کی صدارت مشترکہ طور پر بندنا سنگھ،ناصرین انجم،و عظمیٰ رحیم نے کی جبکہ نظامت کے فرائض انجام رنگ کماری، سریندر پرساد سنگھ نے دیا،سویدھا ن بچاؤ سنگھرش سمیتی کے کوآرڈینیٹر سریندر پرساد سنگھ نے تمام لوگوں سے اپیل کی کہ آئندہ 19 فروری کو سمستی پور کالج سے متصل ہاؤسنگ بورڈ میدان میں کامریڈ کنہیا کمار کی جن گن من سبھا زیادہ سے زیادہ لوگ شریک ہو کر پروگرام کو کامیاب بناؤیں۔