جنتادل یو کے رام ناتھ ٹھاکر نے راجیہ سبھا میں ذات پر مبنی مردم شماری کا معاملہ اٹھایا

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 07-Feb-2020

نئی دہلی:جنتادل یو کے ممبر پارلیمنٹ رام ناتھ ٹھاکر نے آج راجیہ سبھا میں وقف صفر کے دوران ذات پر مبنی مردم شماری کا معاملہ اٹھایا انہوں نے حکومت سے سال 2021 میں ہونے والی مردم شماری کے ساتھ ذات پر مبنی مردم شماری بھی کرانے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے بتایاکہ وزیراعلیٰ نتیش کمار اس معاملے کو کئی بار اٹھاچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ برطانوی دور حکومت میں سال 1931 میں ذات پر مبنی مردم شماری کرائی گئی تھی۔ اس کے بعد یوپی اے حکومت نے سال 2010 میں ذات پر مبنی مردم شماری کرانے کی کوشش کی لیکن یہ پورا نہیں ہوسکا۔ انہوں نے حکومت کو بتایاکہ ذات پر مبنی مردم شماری کرانے سے پسماندہ طبقہ ایس سی اور ایس ٹی کی تعداد کا پتہ چلے گاجس کی بنیاد پر ان کے لئے فلاحی منصوبہ بنانے میں مدد ملے گی۔ رام ناتھ ٹھاکر نے کہا کہ ذات پر مبنی مردم شماری اس لئے بھی ضروری ہے کہ سب کو ترقی کا فائدہ مل سکے اور محروم طبقات کو قومی دھادے سے جوڑا جاسکے۔ اس لئے حکومت سال 2021 میں ہونے والی مردم شماری میں ذات پر مبنی مردم شماری کی تجویز کو شامل کرے ۔