دیواپور ہائی اسکول میں طالبہ کا قتل

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 12-Feb-2020

گوپال گنج :(ارون مشرا)برولی تھانہ کے دیوا پو ر ہائی اسکول میں کلاس 9ویں کی طالبہ کا قتل کر دیا گیا ۔ حادثہ کے بعد سموار کی شام طالبہ کی لاش اس کے کلاس روم میں ملی ۔ مہلوکہ طالبہ کی شناخت دیواپور گائوں باشندہ لال بابو پٹیل کی لڑکی پرینکاکماری کے طو ر پر ہوئی ہے ۔ حادثہ کی اطلاع پاکر پولس نے لاش کو اپنے قبضے میں لیکر تفتیش شروع کردی ہے ۔ اہل خانہ نے بتایاکہ طالبہ سموار کو اسکو ل میں پڑھنے گئی تھی ۔ طالبہ کا کلاس روم دوسری منزل پر تھا ۔ اسکول میں چھٹی ہونے کے بعد تمام طلبا گھر چلے گئے لیکن طالبہ اپنےگھر نہیں پہنچی تو اہل خانہ نے تلاش شروع کیا دیر شام تک وہ لوگ تلاش کرتے ہوئے اسکول پہنچے اسکول کے کمرے سےطالبہ کی لاش فرش پر ملی ۔ کلاس روم میں باہر سے تالا بند تھا ۔ طالبہ کے ہاتھ اور دونوں پیربندھے ہوئے تھے ۔ قتل کرنے کے بعد کلاس روم کو باہر سے بند کرنے کی بات بتائی جارہی ہے ۔ حادثہ کی اطلاع پاکر تھانہ انچارج رتیش کمار نے پرنسپل کو چابی کے ساتھ تالا کھولنے کےلئے اسکول بلایا دیر شام تک پرنسپل نہیں پہنچ سکے تھے ۔ تھانہ انچارج نے کہاکہ معاملے کی جانچ کی جارہی ہے ۔ لواحقین نے قتل کرنے کا الزام لگایا ہے تھانہ انچارج نے کہاکہ جانچ کے بعد ہی اس معاملے کا خلاصہ ہو پائے گا ۔ لاش کو پولس نے پوسٹ مارٹم کےلئے عمل شروع کردیا ۔ اسپتال انتظامیہ کی جانب سے پوسٹ مارٹم کےلئے میڈیکل بورڈ کی تشکیل کرنے کا عمل شروع کیاگیا ہے ۔ اسپتال انتظامیہ کے مطابق بورڈ تشکیل کے بعد طالبہ کی لاش کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گا ۔ حادثہ کی جانچ کرنے کےبعد اسکول احاطہ کے آس پاس کے علاقوں میں چھان بین شروع کی گئی ہے ۔ پولس کی جانب سے حادثہ سے جڑے ایک ایک ثبوت کو اکھٹا کیا جارہا تھا ۔ حادثہ کے بعد پولس نے جانچ شروع کی تو پرنسپل اور دیگر استاذ نے اپنا اپنا موبائل آف کر لیا ۔ جس سے پولس کو ابتدائی جانچ میں تھوڑی پریشانی ہوئی ۔