سی اے اے اور این آر سی آئین کے خلاف :کنہیا کمار

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 11-Feb-2020

نوادہ( محمد سلطان اختر ) ضلع نوادہ کے تحت پکری برانواں بلاک کے ہائی اسکول گراؤنڈ میں ایک بہت بڑا اجلاس منعقد کیا ، اجلاس کے نقیب جناب قمرالباری دھمولوی آر جے ڈی اقلیتی سیل کے صدر نے اجلاس کی نقابت کیا،اور مولانا آزاد نے صدارت کا کام انجام دیا، کنہیا کمار کی آمد پر سبھوں نے خیر مقدم کیا، ڈاکٹر کنہیا کمار کے اسٹیج پر آنے سے پہلے بہت سارے ترجمانوں جیسے اجیت مہتا ، نندو کمار یادو ، سوجیت کمار ،مننو منڈل سمیت درجنوں ترجمان نے خطاب کیا ، اور انصاری مہاپنچایت کے صدر نیئر وسیم نے بھی بہت قیمتی باتیں کیں ، یہ سب کنہیا کمار کی آمد سے قبل ہی باتیں کیں۔ ڈاکٹر کنہیا کمار کی آمد پر نوجوانوں نے کچنا موڑ تک 20 موٹرسائیکلوں نے استقبال کیا۔ اور وہاں سے کیمپس کے احاطے میں گراؤنڈ لایا۔ جونہی وہ میدان میں آئے،لوگوں کا ایک جم غفیر تھا اس قدر ازدہام تھا کہ مزید آگے کوئی بات نہیں ہوئی اور مجلس کا باضابطہ پروگرام شروع ہو گیا۔ لوگوں کا ایک بہت بڑا مجمع جمع ہوگیا، ان کی آمد کے بعد افسر نواب عرف چھوٹا لالو نے اسٹیج پر ، ان کے اعزاز میں اور این آر سی کے خلاف اپنے اشعار اور شاعری انداز میں اظہار خیال کیا۔ اس کے بعد ڈاکٹر شکیل احمد خان قدوہ کے ایم ایل اے ، نے اپنے الفاظ میں این آر سی کو زور دار طریقے سے باتیں رکھی،مزید کہا کہ کسی بھی صورت میں یہ کالا قانون ہندوستان میں نہیں چلنے والا، اس کے بعد کنہیا کمار کی تفصیلی تقریر ہوئی لوگوں نے تقریر کو نہایت پرسکون انداز میں سنا ، اور ان کا کہنا تھا کہ این آر پی ہی حقیقی کالا قانون ہے، اس کے بعد اس سے این آر سی اور سی اے اے نکالا جائے گا ، اصل میں این پی آر ایک انڈا ہے، اس کا چوجا سی اے اے ، این آر سی ہے۔ انہوں نے نجی کرن کے بارے میں تفصیل سے بات کی ،اور کہا کہ سب کچھ نجی کرن ہو رہا ہے، جس سے کروڑوں نوجوان بے روزگار ہو گئے ہیں،ایسا حکومت کیوں کر رہی ہے ؟ حکومت کو بھی نجی کرن نہیں کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر ، پولیس ، ماسٹر ، پوسٹ مین ، ان سب کو ریٹائرمنٹ بعد پینشن نہیں ملے گا ، لیکن حکومت میں جو کبھی وزیر اعظم بنے تھے، وزیر اعلی بنے تھے،ایم ایل اے یا ایم پی،بنے سب کو پینشن ملےگا، بتاؤ یہ انصاف کیسا ہے؟ اور ایک ہی اسکول میں دو قسم کے اساتذہ کو انصاف نہیں دے رہا ہے۔ مساوی کام مساوی تنخواہ نہیں ہے۔ کسی کو 65000 روپے ملتے ہیں۔ اس میں کچھ اساتذہ ہیں جن کو دس ہزار روپے ملتے ہیں۔ کام برابر ہے،بلکہ زیادہ ہی ہے،یہ الٹی بھری سرکار ہے، اس نے ان تمام چیزوں پر توجہ نہیں دی۔ اور کہا کہ ستائیس تاریخ کو پٹنہ کے گاندھی میدان میں ، نتیش کمار کو دیکھنا ہے کتنا غصہ ہے لوگوں میں بڑے اجتماع کے ساتھ این پی آر کے لئے تفصیل سے بیان کیا جائے گا۔ کنہیا کمار کا ڈھول نگارے لگا کر اسٹیج پر استقبال کیا گیا۔ اور ڈھول نگاڑے میں این آر سی کے خلاف بہترین گانے گائے گئے۔ اسی طرح جب اجلاس ختم ہوا تو کنہیا کمار ایسے ہی جارہے تھے،نوجوانوں نے کہا کہ وہ نعرے لگائے بغیر نہیں جانے دیں گے،پھر انہوں نے 2 منٹ تک نعرہ لگایا۔ اجتماع کا اختتام آزادی ، آزادی ، بے روزگاری سے آزادی ، مانوواد سے آزادی ، کے نعرے ساتھ اختتام پذیر ہوا، نوادہ شہر کے بنڈیللا باغ مظاہرے پر چلے گئے، اس پروگرام کو کامیاب بنانے میں پکری برانواں کے ہندو ، مسلم عوام کی حمایت حاصل تھی ، اور انقلابی گروپ کے تمام نوجوانوں نے بہت مدد کی ،اس موقع پر ہزاروں ہزار کی تعداد میں مردوں، خواتین تمام برادری نے حصہ لیا۔