ریاست

ظلم کو روکنے کے لئے انصاف پسند طبقہ آگے آئے:مفتی سہراب ندوی

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 14-Feb-2020

پورنیہ،(سونو)ظلم کرنا اگر گناہ ہے توظلم کو دیکھ کر خاموش رہنا بھی گناہ ہے، اس وقت مرکزی حکومت کی طرف سے ظالمانہ قانون سازی کا جو سلسلہ جاری ہے، اورجس کے خلاف پورے ملک میں احتجاج اوردھرنے ہورہے ہیں، پورے ملک میں کہرام سا مچا ہواہے، ایسے حالات میں ملک سے محبت کرنے والے انصاف پسندطبقہ کی ذمہ داری ہے کہ موجودہ سیاسی ظلم کوروکنے کے لئے مضبوطی کے ساتھ آگے آئے اورملک کے آئین ودستوراورجمہوریت کو بچانے کی لڑائی میں خود کو شریک رکھے۔ ان خیالات کااظہار امارت شرعیہ کے نائب ناظم مفتی محمد سہراب ندوی صاحب مورخہ ۳۱فروری کو مدرسہ قاسمیہ آسیانی ضلع پورنیہ کے احاطہ میں منعقد ایک بڑے اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے اس موقع پر سی اے اے، این پی آر اوراین آرسی جیسے ظالمانہ قوانین کا تفصیل سے چرچاکیا۔ اور15فروری کو تمام ضلع ہیڈ کواٹر میں ہونے والے دھرنے کو کامیاب بنانے کی اپیل کی۔ اورموجودہ وقت میں احتجاج اوردھرنے کے ساتھ گناہوں کو ترک کرنے، اللہ سے رشتہ مضبوط بنانے اوردعاؤں کا اہتمام کرنے کی تلقین کی۔جناب قاضی ارشد قاسمی صاحب قاضی شریعت پورنیہ نے امارت شرعیہ کی خدمات اورحضرت امیر شریعت کی ہمہ جہت ملی کاوشوں کا تعارف کرایا۔جناب مفتی احتکام الحق قاسمی مفتی امارت شرعیہ نے خواتین کی بیداری کی اہمیت اورموجودہ حالات میں ان کے حوصلہ مندانہ کردار کی عظمت پرروشنی ڈالی اورکہاکہ خواتین صرف اندرون خانہ نہیں وہ اپنے حوصلہ سے خارجی حالات کو بھی بدلنے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔ جناب مولانا مزمل حسین قاسمی صاحب نے نظامت کے فرائض انجام دیئے۔ مولانا سعوداللہ رحمانی صاحب نے افتتاحی گفتگو کی۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper