ہندستان ہندوستان

لدھیانہ شاہین باغ میں بلڈ ڈونیشن کیمپ لگا کر کیا گیا مودی سرکار کے خلاف احتجاج

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 24-Feb-2020

لدھیانہ( مستقیم /پریس ریلیز (شہر کے شاہین باغ میں آج 11ایں دن ایل بلاک رندھیر سنگھ نگر سے ڈاکٹر محمد ادرسے محمد فرقان باڑئوال مسجد محمد یامین محمد عمارن کی زیر قیادے بڑی تعداد میں خواتین کا قافلہ شامل ہو اسی دوران نواں شہر سے دلت بھائیوں کا جتھہ بھی سابقہ ایم ایل اے شنگاہارا رام کی صدارت میں شامل ہوا اور آج شاہین باغ لدھیانہ میں سہراس سوسائٰ کی جانب سے خون دان کیمپ لگا کر سبھی ہندو مسلم سکھ عیسائی اور دلت بھائیوں نے مودی سرکا کے خلاف احتجاج درج کروایا ،اس موقعہ پر بل خصوص شاہی امام پنجاب حضرت مولانا حبیب الرحمن ثانی لدھیانوی بھی پہنچے ، شاہی امام نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فرقعہ پرست طاقتیں آج یہاں آکر دیکھ لیں کہ ہندو مسلم سکھ عیائی اور دلت بھائیوں کے خون کا رنگ ایک ہی ہے جسکا رنگ دنیا کی کوئی طاقت تبدیل نہیں کر سکتی ، شاہی امام مولانا حبیب الرحمن لدھیانوی نے احتجاج کرنے والوں کو ؁ٹکڑے تکڑے گینگ کہنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ یہ گینگ نہیں دیش کی آواز ہے جسے سرکاری تنتر دبا نہیں سکتے ، انہوں نے کہا کہ نے کہا کہ لدھیانہ شاہین باغ دہلی کے شاہین باغ کا حصہ ہے جس میں تمام مذاہب کے لوگ روزانہ پھولوں کی طرح کھل کر بتا رہے ہیں کہ ہم یہ باغ اجڑنے نہیں دینگے ، شاہی امام نے نے کہا کہ آنیوالے دنوں میں دیش کے ہر اک شہر اور قصبے میں شاہین باغ بنتے نظر آئیں گے ، سابقہ ایم ایل اے شنگہارا رام سنگھوڑا نے کہا کہ بابا صاحب بھیم رائوں امبیڈ کر صاحب نے آئین لکھ کر جو حقوق تمام بھارت کے لوگوں کو دئے ہیں اس پر کسی کو ڈاکہ نہیں ڈالنے دینگے ، سونگڑھ نے کہا کہ این ٓار سی اور سی اے اے بھاجپا کی ایک سازش ہے ، اانہوں نے کہا کہ لدھیانہ شاہین باغ میں آج سبھی دھرموں کے لوگوں کو دیکھ کر یقین ہو گیا کہ بابا صاحب کا مشن آگے بڑھ رہا ہے ، سکھ فار لائنس کے سردار پرمپال سنگھ نے کہا کہ مودی سرکار کی جانب سے سی اے اے میں سکھوں کو شامل کر کے مسلمانوں کو نکال کر جو قانون بنایا گیا ہے وہ سکھ قوم کو منظور نہیں ، پرمپال سنگھ نے کہا کہ سکھ پنتھ نے سبھی انسانوں کو ساتھ لیکر چلنے کی بات ہمیشہ کہی ہے ، اس موقعہ پر دھرم پاک کنوینر بھگت سنگھ منچ ریل کو چ فیکٹری کپورتھلہ ، گردیال سہوتا مول نواسی سنگ ، سرون جیت سنگھ انقلابی مورچہ ، ڈاکٹر درشن پال کرانتی کاریہ یونین ، ڈاکٹر بال سنگھ سابقہ ڈپٹی چیئرمین قومی اقلیتی کمیشن وجے نارائن ، رمن جیت سنگھ لالی ، رابعہ رضوان ، شائنہ حسیبہ ، نے بھی خطاب کیا ۔

About the author

Taasir Newspaper