کورونا وائرس کے معاملے میں کسی بھی افواہ سے گھبرائیں نہیں

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 16-March-2020

پٹنہ،(اسٹاف رپورٹر)ڈبلو ایچ او نے نول کورونا وائرس بین الاقوامی پبلک ہیلتھ ایمرجنسی قرار دیا ہے۔ اس وائرس سے اب تک 142539معاملے سامنے آئے ہیں جن میں 5393لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ دنیا کے تقریباً 135 ملک اس وائرس کی زد میں ہیں۔ بھارت میں کورونا وائرس کے 82 معاملے سامنے آئے ہیں۔ 15 جنوری 2020 سے اب تک بہار میں کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک سے لوٹے 274 مسافروں کو سرولائنس میں رکھاگیا ہے۔ بہار اسٹیٹ ہیلتھ سوسائیٹی نے اس معاملے کو دیکھتے ہوئے کئی احتیاطی تیاریاں بھی کی ہیں۔ محکمہ صحت نے ریاست کے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کورونا وائرس کے معاملے میں کسی بھی افواہ سے گھبرائیں نہیں۔ سبھی سے گذارش ہے کہ جو صلاح دی گئی ہے اس پر عمل کیا جائے۔ چھینکتے اور کھانستے وقت ناک اور منہہ کو ڈھکنے کے کیلئے رومال اور تولئے کا استعمال کریں ۔ ہاتھوں کو صابن سے دھوتے رہیں۔ جو لوگ کورونا وائرس سے متاثرہ ملکوں سے آئے ہیں۔ انہیں گھر پر ہی رہنا چاہئے اور وائرس کی علامت پائے جانے پر انہیں گھر سے باہر اور عام مقامات پر نہیں جانے کی صلاح دی جاتی ہے۔ جس شخص میں وائرس کی علامت پائی جائے ان سے گذارش ہے کہ وہ فوراً 104 پڑ ڈائل کریںیا قریبی سرکاری ہیلتھ سنٹر سے رابطہ کریں۔ اس بیچ کورونا وائرس سے ہورہی موت اور اس کے بڑھتے خطرے سے پورے ملک میں دہشت کاعالم ہے۔ اس کااثر بھارتیہ ریل پر بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔ وزیر ریل نے کورونا کو لے کر سبھی ریل ڈویزنوں کوالرٹ کر دیا ہے۔ بہار کے داناپور ڈویزن میں الرٹ کے بعد کافی چوکسی سے کام لیا جارہا ہے۔ ٹرین کی اے سی باگیوں سے پردوں کو نکالا جارہا ہے ساتھ ہی سبھی ٹرینوں کو سینیٹائیزڈ کرنے کاکام بھی شروع کر دیا گیا ہے۔ اے سی کوچ میں لگے پردوں کو ہٹادیاگیا ہے اور کوچ کا ٹیمپریچر 27 ڈگڑی سے کم نہیں ہوگا اس کی وجہ سے مسافروں کو مانگنے پرہی کمبل مہیا کرائے جائیں گے۔ دراصل ریلوے نے یہ سب کچھ کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے کیا ہے۔ سبھی ٹرینوں کے اے سی کوچوں سے پردے ہٹادئے گئے ہیں۔ اگلے حکم کے بعد ہی اس سلسلے میں کوئی قدم اٹھایا جائے گا۔ بیڈ رول اور کمبل کے علاوہ کوچوں کی صفائی پر بھی خاص توجہ دی جارہی ہے۔ سبھی کوچوں چاہے وہ میل، پیسنجر یا اکسپریس ہوں سبھی باگیوں کو سیناٹائزڈ کرایا جارہا ہے۔ بیت الخلاء سے لے کر باگیوں تک میں اینٹی ویکٹیریل کاچھڑکا ؤ کیا جارہا ہے۔ بنگلور سے پٹنہ آنے والی سنگ مترا اکسپریس اور دہلی سے پٹنہ آنے والی جن سادھارن اکسپریس کے سبھی باگیوں کو سیناٹائزڈ کیا گیا ہے۔ ٹرین کی باگیوں کے ہر کونے کو صاف کیا جارہا ہے۔ یہ صفائی ایک خاص طرح کے کیمیکل سے کیا جارہا ہے تاکہ کورونا اثرانداز نہیں ہوسکے۔ یہاں تک کہ ٹرین میں فوگنگ مشین سے فوگنگ کیا جارہا ہے۔ ٹرینوں کی صفائی کی حفاظت میں خواتین بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہیں۔ صفائی عملوں میں سب سےزیادہ خواتینوں جو ٹرینیں کی باگیوں کی صفائی، ہاتھوں میںدستانے اورکیمیکل لے کر کررہی ہیں۔ ڈی آر ایم داناپور سنیل کمار نے بتایا کہ کورونا وائرس کوویڈ 19 کو لے کر ریلوے بورڈ کی ہدایت کے بعد داناپور ڈویزن کے سبھی ٹرینوں کو پوری طرح سے پردوں سے پاک کر دیاگیا ہے۔ اور ٹیمپریچر بھی 27 ڈگری تک لمیٹ کر دیاگیا ہے۔