جھارکھنڈ

جھارکھنڈ حکومت نے وزارت داخلہ سے مانگی اجازت

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Ranchi (Jharkhand) on 22-May-2020

رانچی: جھارکھنڈ کے وزیر اعلی ہیمنت سورین نے لداخ، انڈومان و شمال مشرق میں پھنسے مزدوروں کو چارٹرڈ پلین سے لانے کی اجازت مانگی ہے۔جھارکھنڈ حکومت کی جانب سے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کو خط بھی بھیجا گیا ہے۔چارٹرڈ پلین کی اجازت کے پیچھے وجہ یہ بتائی گئی ہے کہ لداخ، انڈومان و شمال مشرق میں پھنسے مزدوروں کو کسی دوسرے نقل و حمل کے ذریعے جیسے بس یا ٹرین سے لانا فی الحال ممکن نہیں ہے، اس لئے اگر وزارت داخلہ سے ان علاقوں سے مزدوروں کو چارٹرڈ پلین سے لانے کی اجازت مل جاتی ہے تو ان کی بھی محفوظ واپسی ہو سکتی ہے۔ وزیر اعلی ہیمنت سورین نے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کو لکھے گئے خط میں اس بات کا بھی ذکر کیا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی اجازت ملنے کے بعد جھارکھنڈ میں ڈیڑھ لاکھ تارکین وطن محنت کشوں کی واپسی ہو چکی ہے۔جھارکھنڈ حکومت نے 12 مئی کو بھی لداخ، انڈومان و شمال مشرق میں پھنسے مزدوروں کو چارٹرڈ پلین سے لانے کی اجازت مانگی تھی لیکن لداخ میں تقریبا 200، شمال مشرقی ریاستوں میں قریب 450 ملازمین اب بھی پھنسے ہوئے ہیں، جنہیں ٹرین یا بس سے لانا فی الحال ممکن نہیں ہے، اس لئے وزارت داخلہ جھارکھنڈ کے مزدوروں کو چارٹرڈ پلین سے احترام سے لانے کی اجازت دیں۔

جھارکھنڈ کے وزیر اعلی ہیمنت سورین نے اعلان کیا کہ تارکین وطن راہگیروں کے لئے ریاست کی حد میں ہائی وے پر ہر 20 کلو میٹر پر کمیونٹی کچن کھولے جائیں گے۔وزیر اعلی نے آج یہاں میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ اس طرح کے کمیونٹی کچن کو ضلع انتظامیہ کے تعاون سے چلایا جائے گا۔ابھی تک ایسے کچن کھولنے کے لئے 94 مقامات کو نشان زد کیا جا چکا ہے،ان میں مفت خوراک اور پانی کا بندوبست کیا جائے گا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper