ہندستان

بی جے پی نے بدلی دہلی ، چھتیس گڑھ ، منی پور کی کمان

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

تاثیر اردو نیوز سروس،2؍جون، 2020

نئی دہلی، بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر جگت پرکاش نڈا نے آج پارٹی کی دہلی ، چھتیس گڑھ اور منی پور یونٹوں کی کمان تبدیل کردی۔ دہلی میں ، مسٹر آدیش گپتا کو ممبر پارلیمنٹ منوج تیواری کی جگہ ریاستی صدر مقرر کیا گیا ہے۔پارٹی کے جنرل سکریٹری ارون سنگھ نے یہ معلومات یہاں دیں۔مسٹر آدیش گپتا ، جو شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر تھے ، کو ریاستی بی جے پی صدر بنا دیا گیا ہے۔ چھتیس گڑھ میں ، قبائلی رہنما اور سابق مرکزی وزیر وشنو دیو سائی کو نیا ریاستی صدر بنایا گیا ہے۔ منی پور میں پروفیسرایس ٹکیندر سنگھ کو بی جے پی کی کمان سونپی گئی ہے۔دہلی میں ریاستی صدر کے نام کے لئے پارٹی میں کئی دنوں سے غوروخوض چل رہاتھا۔ ذات پات کی مساوات کا خیال رکھتے ہوئے فیصلہ کیا گیا کہ اس بار پوروانچل سے کسی کو موقع نہیں ملے گا۔ پنجابی یا ویشئے برادری کا کوئی فرد صدر بنایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق پارٹی کے سینئر رہنماؤں کا خیال ہے کہ وزیر اعلی اروند کیجریوال ویشئے برادری سے تعلق رکھتے ہیں اور انہوں نے ویشیوں سے قابل ذکر ووٹ حاصل کیے تھے۔ آخر کار ، اس خیال کے مطابق ہی آدیش گپتا کا نام منتخب کیا گیا۔چھتیس گڑھ میں پچھلے لوک سبھا انتخابات کے وقت ، اس وقت کے بی جے پی صدر امت شاہ نے مسٹر دھرم لال کوشک کو ہٹاکر مسٹر وکرم اوسینڈی کا صدر مقرر کیا تھا۔ مسٹر اوسنڈی کے دور میں لوک سبھا انتخابات کامیاب ہوئے لیکن بی جے پی اس کے نتیجے میں پنچایت اور بلدیاتی انتخابات میں توقع کے مطابق کارکردگی کا مظاہرہ کرنے میں ناکام رہی۔بی جے پی کے صدر مسٹر نڈا نے چھتیس گڑھ کے جیش پور ضلع کی تحصیل کانسابیل کے ایک چھوٹے سے گاؤں بگیہ میں کسان پس منظر کے مسٹر وشنو دیو سائی کو ریاستی بی جے پی کی کمان سونپی ہے۔ مسٹر سائی 16 ویں لوک سبھا میں رائے گڑھ سیٹ سے منتخب ہوئے اور اسٹیل اور کانوں کے وزیر مملکت بنے۔ وہ سابق وزیر اعلی ڈاکٹر رمن سنگھ کے قریبی سمجھے جاتے ہیں۔ پچھلے سال ، 17 ویں لوک سبھا کے انتخابات میں ، چھتیس گڑھ کی تمام 11 سیٹوں پر نئے چہرے کھڑے کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ تو مسٹر سائی کو بھی ٹکٹ نہیں ملا تھا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper