ہندستان

جیو پلیٹ فارمز میں ابوظہبی کی ’مبادلہ‘ کم 9،093.60 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

تاثیر اردو نیوز سروس،5؍جون، 2020

نئی دہلی، جیو پلیٹ فارمز میں سرمایہ کاری کے لئے غیر ملکی سرمایہ کاروں کی قطاریں لگ گئی ہیں۔ جمعہ کے روز کمپنی کو چھ ہفتوں میں چھٹا بڑا سرمایہ کار ابو ظہبی کی ’مبادلہ‘ ملا، جس نے جیو پلیٹ فارم میں 1.85 فیصد ایکویٹی کے لئے 9،093.60 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا۔ مبادلہ نے جیو پلیٹ فارم کی ایکویٹی ویلیو کی قیمت 4.91 لاکھ کروڑ روپے رکھی ہے۔ فیس بک کی سرمایہ کاری کے ساتھ ، جیو پلیٹ فارمز میں شروع ہونے والی سرمایہ کاری رکی نہیں ہے۔ اب تک ، مجموعی طور پر چھ بڑے سرمایہ کاروں نے جیو پلیٹ فارم میں مجموعی طور پر 87،655.35 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی ہے۔ پہلا فیس بک ، اس کے بعد دنیا کے صف اول کے سرمایہ کار سلور لیک ، وسٹا ایکویٹی پارٹنرز ، جنرل اٹلانٹک اور کے کے آر اور اب مبادلہ انویسٹمنٹ کمپنی شامل ہیں۔جیو پلیٹ فارم ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کی ملکیت والی کمپنی ہے جسکا مقصداگلی نسل کی ٹیکنالوجی کو ملک کو ڈجیٹل معاشرے کو فروغ دینا ہے۔ اس کے لئے جیو کا ڈجیٹل ایپ ، ڈجیٹل ایکو سسٹم اور ملک کی پہلے نمبرکی تیز رفتار رابطے کے پلیٹ فارم کو ایک ساتھ کرنے کے لئے کمپنی کام کر رہی ہے۔ ریلائنس جیو انفوکوم لمیٹڈ ، جس کے 388 لاکھ صارف ہیں ، جیو پلیٹ فارمز لمیٹڈ کی مکمل ملکیت رہے گی۔مبادلہ کی سرمایہ کاری سے متعلق ریلائنس انڈسٹریز کے چیئرمین اور منیجنگ ڈائریکٹر مکیش امبانی نے کہا ”مجھے خوشی ہے کہ دنیا کے بہترین اور تغیر پذیر سرمایہ کاروں میں سے ایک ’مبادلہ‘ نے ہمارے ساتھ شراکت کا فیصلہ کیا ہے۔ وہ ہندوستان کو ڈجیٹل ملک بنانے میں ہماراہم سفربنے گی ۔ابوظہبی کے ساتھ میرے طویل عرصہ سے تعلقات ہیں اور میں نے دیکھا ہے کہ متحدہ عرب امارات کی سائنس پر مبنی معیشت کو دنیا سے مربوط کرنے اور تنوع کے رنگ میں لانے کے لئے مبادلہ نے زبردست کام کیا ہے ۔مبادلہ کے تجربے سے فائدہ حاصل کرنے کے لئے ہم بے چین ہیں“۔ مبادلہ انویسٹمنٹ کمپنی کے منیجنگ ڈائرکٹر اور گروپ سی ای او خلدون المبارک نے کہا ”ہم نے دیکھا ہے کہ جیو نے ہندوستان میں مواصلات اور رابطے کو کس طرح تبدیل کیا ہے ، اور ایک سرمایہ کار اور شراکت دار کی حیثیت سے ، ہم ہندوستان کی ڈجیٹل ترقی کی حمایت کرنے کیلئے پرعزم ہیں“۔مبادلہ کے پورٹ فولیو میں ایڈوانس مینوفیکچرنگ ، سیمی کنڈکٹر ، معدنیات اور کانکنی ، دواسازی اور طبی ٹیکنالوجی ، قابل تجدید توانائی و افادیت ، ایرو اسپیس اور متنوع مالیاتی ہولڈنگز کے نظم و نسق شامل ہیں۔جیو ایک ایسا’ڈجیٹل انڈیا‘ بنانا چاہتا ہے جس کا فائدہ 130 کروڑ ہندوستانیوں اور کاروباری اداروں کو ہوگا۔ ایک’ڈجیٹل انڈیا‘ جو خاص طور پر ملک میں چھوٹے تاجروں ، مائیکرو کاروباریوں اور کسانوں کے ہاتھ مضبوط کرے گا۔
جیو نے ہندوستان میں ڈجیٹل انقلاب لانے اور دنیا کی سب سے بڑی ڈجیٹل طاقتوں کے درمیان ہندوستان کو ایک نمایاں مقام دلانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper