سیاست

ایل جے پی اور جنتا دل یو میں اختلافات بڑھے

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Patna (Bihar)  on 03-July-2020

پٹنہ: بہار اسمبلی انتخابات کی تیاریاں زور شور سے جاری ہیں۔تمام سیاسی پارٹیاں متحرک ہوگئی ہیں۔حالانکہ این ڈی اے نے نتیش کمار کی قیادت میں بہار اسمبلی انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیاہے۔ لیکن این ڈی اے میں سب کچھ ٹھیک نہیں ہے۔ ایل جے پی کے سربراہ چراغ پاسوان 40سیٹوں پر الیکشن لڑنا چاہتے ہیں ساتھ ہی ساتھ وہ وزارت میں بھی اپنی نمائندگی چاہتے ہیں اس کے علاوہ 12ارکان کونسل کی نامزدگی جو گورنر کے ذریعہ ہونی ہے اس میں بھی دو سیٹیں چاہتے ہیں۔ اس معاملےپر حکمراں جے ڈی یو اور ایل جے پی کے درمیان زبانی جنگ کا سلسلہ جاری ہےاور دونوں حلیف پارٹیوںمیں تلخی بھی بڑھتی جارہی ہے۔ لوک جن شکتی پارٹی کے قومی صدر چراغ پاسوان اس وقت وزیر اعلیٰ اور جنتا دل یونائیٹڈ کے قومی سربراہ اور بہار کے وزیراعلی نتیش کمار سے بری طرح برہم ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ چراغ پاسوان اس بات سے دلبرداشتہ ہیں کہ نتیش انہیں ترجیح نہیں دیتے اس لئے چراغ پاسوان اب نتیش کمار کے ساتھ آر پار کے موڈ میں نظر آ رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ایل جے پی کا بی جے پی سے اتحاد ہوا ہے اس لئے کوئی بھی مسئلہ ہوگا وہ براہ راست بی جے پی سے رابطہ کریںگے اور مسئلہ کا حل نکالیںگے۔کہاجاتا ہے کہ ان کے مطالبے کے مد نظر بی جے پی انہیں ایک سیٹ کونسل میں دینے کیلئے تیار ہے۔ ویسے 7سیٹ جے ڈی یو ،4سیٹ بی جے پی اور ایک سیٹ ایل جے پی کو مل سکتی ہے۔ امید ہے کہ امروز فردا میں 12ارکان کونسل کی نامزدگی گورنر کریںگے ویسے بھی نامزدگی میں وزیراعلی کا اہم رول ہوتا ہے وزیراعلی کی سفارش پر ہی گورنرعمل کرتے ہیں۔چراغ پاسوان کے نزدیکی ذرائع کے مطابق نتیش فون کرنے پر نہ کبھی پلٹ کر بات کرتے ہیں اور نہ ہی ان کی تجویز پر کوئی عمل کرتے ہیں، ظاہر ہے کہ دونون کے بیچ تعلقات ٹھیک نہیں چل رہے ہیں۔ دونوں کے تعلقات میں تلخی کی بات کورونا بحران کے درمیان واضح طور پر منظر عام پر آ گئی کیونکہ چراغ نے کئی معاملات میں نتیش کمار پر نشانہ لگانے میں پرہیز نہیں کیا، خواہ وہ کوٹہ کے طلباء کو واپس لانے کا معاملہ ہو یا پھرمزدوروں کو واپس لانے کا۔اب قانون ساز کونسل کی 12 سیٹوں کے لئے گورنر نامزدگیاں کرنے والے ہیں اور اس کے بعد فیصلہ ہو جائے گا کہ بہار میں نتیش جو چاہیں گے وہی ہوتا رہے گا یا پھر چراغ پاسوان کو بھی ساتھ رکھنے کی کوشش کی جائے گی اور ان کے مطالبات کے مطابق لوک جن شکتی پارٹی کو دو سیٹیںدی جائیںگی۔ابھی تک یہ مانا جا رہا تھا کہ جے ڈی یو کے کھاتہ میں 7 اور بی جے پی کے کھاتہ میں 5 سیٹیں جائیں گی۔ لیکن بدھ کے روز بی جے پی کے جنرل سکریٹری اور بہار کے انچارج بھوپیندر یادو نے نتیش کمار سے ملاقات کی۔بتایا جاتا ہے کہ ملاقات کے دوران چراغ پاسوان کےمطالبے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔اس سے قبل چراغ پاسوان بھوپیندر یادو سے دہلی میں ملے تھے۔چراغ پاسوان گذشتہ ڈیرھ ماہ سے مسلسل ریاست کے متعدد اسمبلی حلقوں کا دورہ کرکے رائے دہندگان سے فیڈ بیک لے رہے ہیںاور کئی جگہوں پر انہوں نے اپنی تقریر کے درمیان براہ راست نتیش کمار پر نشانہ سادھا ہے اور جس طرح سے ریاستی حکومت ہمہ جہت ترقی کا دعوی کرتی ہے اس کی پول کھولی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper