دنیا بھر سے

عازمین حج کی تعداد کم ہونے سے صومالیہ کے مویشیوں کی برآمدات متاثر

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Riyadh (Saudi Arabia)   on 30-July-2020

ریاض: کرونا وائرس کے باعث رواں برس حج میں عازمین کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے افریقی ملک صومالیہ کی لائیو اسٹاک کی صنعت کو شدید دھچکا لگا ہے۔ عمومی طور پر ہر سال حج کے موقع پر صومالیہ سعودی عرب کو قربانی اور عازمین کی خوراک کے لیے لاکھوں جانور برآمد کرتا ہے۔ لیکن اس بار ایسا نہیں ہوا۔ تحقیقاتی جرنل ’ویٹرنری میڈیسن اینڈ سائنس‘ کی ایک رپورٹ کے مطابق سعودی عرب نے 2019 میں حج کے سیزن میں 30 لاکھ سے زائد بھیڑ، بکریاں، گائے، بیل اور اونٹ درآمد کیے تھے جن میں سے بڑا حصہ صومالیہ کے مویشیوں کے تاجروں نے برآمد کیا تھا۔ لیکن اس بار عازمین کم ہونے کی وجہ سے سعودی عرب نے رواں ماہ صومالیہ سے جانور درآمد نہیں کیے۔ دنیا بھر سے ہر سال لاکھوں افراد حج کے اجتماع میں شریک ہوتے ہیں۔ تاہم رواں برس سعودی حکام نے کرونا وائرس کے باعث حج کو محدود کر دیا ہے۔ نشریاتی ادارے ’الجزیرہ‘ کی رپورٹ کے مطابق اس بار صرف 10 ہزار عازمین حج ادا کر رہے ہیں۔ جنوبی صومالیہ کے مویشیوں کے تاجر حسن فرح عمومی طور پر حج کے دنوں میں مصروف ہوتے ہیں اور بحری جہازوں میں مویشی لاد کر سعودی عرب بھیج رہے ہوتے ہیں۔ لیکن رواں برس اْن کے بقول کرونا وائرس نے ان کا کاروبار تباہ کر دیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper