دہلی

ناجائز تعلقات کے شک میں بیوی کا کیاقتل

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | New Delhi  (India) on 26-September-2020

نئی دہلی: ہریانہ کے پانی پت میں ہوئے ایک ساتھ تین قتل کی گتھی کو سلجھانے کا پولیس نے دعویٰ کیا ہے۔ سمالکھا کھنڈ میں ایک کے بعد ایک تین خواتین کے قتل کی گتھی کو سی آئی اے ون پولیس نے سلجھانے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ ڈی ایس پی ستیش وتس نے کانفرنس کرکے انکشاف کیا کہ ایک کے بعد ایک تین خواتین کے قتل کی واردات کو انجام دینے والا کوئی اور نہیں بلکہ مہلوک خاتون مدھو کا شوہر نور حسن ہی ہے۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے اور آگے کی کارروائی شروع کردی ہے۔ملزم نے ناجائز تعلقات کے شک کے چلتے پہلے اپنی بیوی کا قتل کیا پھر ثبوتوں کو چھپانے کیلئے نور حسن نے اپنی بیوی کی لاش کو جلایا ۔ خاتون کی لاش پولیس کو ریلوے ٹریک پر پڑی ملی تھی۔ اس کے بعد ملزم نور حسن نے ایک کے بعد ایک اپنی ساس اور 18 سال کی اپنی سالی منیشا کو تیز دھار ہتھیار سے حملہ کرکے موت کے گھاٹ اتارادیا۔ نور حسن نے اپنی ساس کی بھی پہچان چھپانے کیلئے اس کو جلاکر لاش کو نہر میں پاس پھینک دیا تھا۔ سالی کا قتل نالے میں پھینک دیا تھا۔فی الحال سی اے آئی نے ملزم کوگرفتار کر لیا ہے۔ پوچھ۔گچھ کیلئے 28 ستمبر تک ریمانڈ پر لیا ہے تاکہ کچھ اور انکشاف بھی ہوسکیں۔ واضح رہے کہ ملزم نور حسن اصل طور پر پر پٹی کلیانی کا رہنے والا تھا۔ یہ سمالکھا میں کرائے کے مکان میں رہتا تھا۔ دریں اثناء ملزم نے وارداتوں کو انجام دینے کے بعد جگہ بدلنے کی کوشش کی اور پولیس نے ملزم کو گرفتار کرنے میں بڑی کامیابی حاصل کی۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper