ریاست

راحت کے لئے خود کو کینسر مریض بتا کر حکومت کودیا دھوکہ

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Samastipur (Bihar)  on 22-Oct-2020

سمستی پور: کوئی سوچ نہیں سکتا ہے کہ فرضی راحت کے لئے ، کوئی خود کو کینسر مریض قرار دے کر حکومت کو دھوکہ دے سکتا ہے۔ لیکن اس جعلسازی کا انکشاف ضلع کے وارث نگر بلاک سے دو ٹھگوں کی گرفتاری سے ہوا ہے۔ موصولہ اطلاع کے مطابق ، جی آر پی نے دو ٹھگوں کو گرفتار کیا ہے جنہوں نے کینسر کے مریض بن کر حکومت کی طرف سے دی جانے والی مراعات کا فائدہ اٹھایا۔جس میں ایک فرضی مریض بنا ہؤا تھا تو دوسرا اسکا خادم ۔ جی آر پی پولیس تھانہ رنجیت کمار نے بتایا کہ صفدر گنج دہلی اسپتال سے جاری سرٹیفکیٹ کی بنیاد پر نتیش کمار ولد رائے بیرندر کرشنا سنہا ،رہائش وارث نگر،  جبکہ دوسرا ضلع مظفر پور کے کڈھنی کا رہائشی ، غریب ناتھ پاسوان کا بیٹا وکاس کمار تھا ،پولیس نے خفیہ معلومات کی بنیاد پر اپنا ذال بچھایا،  جب دونوں پلیٹ فارم نمبر ایک کے گیٹ نمبر ایک سے باہر نکلنے کی کوشش کر رہے تھے تو جی آر پی نے انہیں دھر دبوچا،  اس کے بعد کی گئی تفتیش میں ساری حقیقت سامنے آگئی ، تفتیش میں اس سے رعایتی ریلوے کا ٹکٹ ، دو موبائل فون ، پین کارڈ ، 1280 روپے نقد ، ایک امریکی ڈالر بھی برآمد ہوا۔ پولیس دونوں کو جیل بھیجنے کے لئے تیاری کر رہے تھے۔واضح ہوکہ کینسر میں مبتلا مریض کو مقررہ قیمت کے 25 فیصد ادائیگی پر ٹکٹ ملتا ہے۔  اس میں ایک خدمت گار بھی ہوتا ہے۔  یہ لوگ حکومت کی اس پالیسی کا فائدہ اٹھا رہے تھے۔

 

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper