سیاست

وزیراعلی کودہشت گردوں سے جوڑنے کیخلاف ٹی آر ایس الیکشن کمیشن سے رجوع

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Hyderabad (Telangana)  on 21-November-2020

حیدرآباد: حکمران ٹی آر ایس پارٹی نے وزیراعلی کے سی آر کو غدار قرار دیتے ہوئے دوسرے نازیبا ریمارکس کرنے کے ساتھ شہر حیدرآباد کے امن و امان کونقصان پہونچانے اور مذہبی جذبات بھڑکانے والے تلنگانہ بی جے پی کے صدر بنڈی سنجے کے خلاف کارروائی کرنے کی الیکشن کمیشن کو یادداشت پیش کی۔ انتخابی قواعد کی خلاف ورزی کرنے والے بنڈی سنجے کے خلاف آئی پی سی سیکشن کے خلاف کارروائی کرنے کی اپیل کی۔ اس سلسلہ میں ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل بی راجیشور ریڈی ٹی آر ایس کے اسٹیٹ جنرل سکریٹری بھارت کمار اور کمشنر پارتا سارتھی سے ملاقات کرتے ہوئے نمائندگی کی ہے۔ اس موقع پر میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے پی راجیشور راؤ نے بنڈی سنجے کی جانب سے کے سی آر کو ملک کا غدار، مخالف ہندو جی ایچ ایم سی انتخابات کو قوم پرست اور غداروں کے درمیان ہونے والی جنگ ٹی آر ایس اورمجلس کے قائدین کو حسامہ بن لادن، افضل گرو، یعقوب میمن اورنگ زیب اور بابر و اکبر کے وارث قرار دینے پر سخت اعتراض کیا۔ ٹیلی ویژن چیانلس اور سوشیل میڈیا نشر ہونے والی ویڈیو کلپس کو ٹی آر ایس کے قائدین بطور ثبوت پیش کیا۔ ٹی آر ایس کے رکن اسمبلی نے انتخابی مہم میں بی جے پی کی جانب سے چنے گئے راستہ کو غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کو اپنا محاسبہ کرنے کی ضرورت ہے۔ رکن پارلیمنٹ ہوتے ہوئے بنڈی سنجے جس طرح مذہبی جذبات بھڑکا رہے ہیں۔ انہیں یہ زیب نہیں دیتا بھرت کمار نے کہا کہ بی جے پی پر امن شہر حیدرآباد میں مذہبی جذبات بھڑکاتے ہوئے امن کو نقصان پہونچانے اور سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہی ہے۔ چیف منسٹر کا حسامہ بن لادن سے تقابل کرنا مضحکہ خیز ہے۔ بی جے پی کے صدر بنڈی سنجے کے خلاف کارروائی کرنے کا الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ دہشت گردوں سے تعلقات رکھنے والی پی ڈی پی سے کشمیر میں بی جے پی اتحاد کرنے کا الزام عائد کیا۔ پاکستان منتقل ہونے والے جناح کے مجسمہ کی بی جے پی کے قائدین نے گلپوشی کرتے ہوئے ان کی ستائش کی تھی۔انہوں نے بی جے پی سے استفسار کیا کہ آیا کہ ریاست میں فلاحی اسکیمات پر عمل کرنا کیا دہشت گردی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper