ملک بھر سے

دو دنوں کی سخت سردی کے بعد پھر بادل کے آثار

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir  Urdu  News  Network  |  Bhopal  (Madhya Pradesh)  on  27-January-2021

بھوپال: شمالی ہندوستان میں پڑ رہی سخت سردی کا ایم پی میں بھی اثر دیکھنے کو مل رہا ہے۔ راجدھانی بھوپال سمیت پورا مدھیہ پردیش شدید سردی کی آغوش میں ہے۔ منگل کے بعد بدھ صبح بھی راجدھانی بھوپال میں شدید سردی کا اثر رہا۔ صبح گھنا کہرا چھانے سے حد بصارت کم ہوگئی۔ محکمہ موسمیات کی مانیں تو درجہ حرارت میں تخفیف کا سلسلہ جمعرات تک جاری رہنے کا امکان ہے۔ وہیں کئی اضلاع میں سرد لہر کا امکان ہے۔ اس کے بعد ہلکے بادل چھانے کے آثار ہیں۔ اس سے کم از کم درجہ حرارت میں اضافہ ہونے لگے گا۔سینئر موسم سائنسداں اجےشکلا نے بتایا کہ حال ہی میں شمالی ہندوستان کے پہاڑی علاقے میں زبردست برف باری ہوئی ہے۔ اس وجہ سے سرد ہواؤں نے راجدھانی بھوپال سمیت پوری ریاست میں ٹھٹھرن بڑھا دی ہے۔ دن اور رات کے درجہ حرارت میں گراوٹ کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ درجہ حرارت میں مسلسل گراوٹ جمعرات تک جاری رہ سکتی ہے۔ اس کے بعد بادل چھانے کا امکان ہے۔ اس کے علاوہ جموں کشمیر سے مغربی ڈسٹربینس گزر چکا ہے۔ ساتھ ہی ایک ٹرف لائن چھتیس گڑھ سےلیکر کوکن گوا تک بنی ہوئی ہے، حالانکہ اس ٹرف سے فی الحال مدھیہ پردیش کے موسم پر خاص اثر ہونےکا امکان نہیں ہے۔ آئندہ 48 گھنٹے میں سرد لہر کے آثار ظاہر کئے گئے ہیں۔ وہیں 29 سے 30 جنوری کے درمیان مشرقی مدھیہ پردیش میں ہلکی بارش ہونے کا امکان ہے۔ مغربی ڈسٹربینس بھی بدھ 27 جنوری کو ختم ہوجائے گا۔ اس وجہ سے ابھی دو تین دن تک شدید سردی پڑ سکتی ہے۔ دو تین دن میں ریاست میں کہیں کہیں درجہ حرارت پانچ ڈگری سیلسیس سے بھی نیچے گر سکتا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper