سیاست

سپریم کورٹ کے حکم کے بعد تو سرکار کو زرعی قوانین واپس لے لینا چاہئے:اکھلیش

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Lucknow (Uttar Pradesh)  on  12-January-2021

لکھنؤ: سماجوادی پارٹی کے قومی صدراکھلیش یادو نے وارانسی کے لال بہادر شاستری ہوائی اڈے پر میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کو دھرنے پر بیٹھے مظاہرین کسانوں کی بات نہیںمانی ہے تو کم سے کم سپریم کورٹ نے کہا ہے تو تمام زرعی قوانین کو واپس لے لینے چاہئے۔واضح رہے کہ اویسی بھی اعظم گڑھ دورے پر ہیں۔انہوںنے ایک سوال کے جواب میںکہا کہ اکھلیش یادو نے مجھے اعظم گڑھ آنے سے اپنے دور اقتدارمیں منع کیا۔اکھلیش یادو نے کہا کہ جب میں سیاست میںبھی نہیں تھا تب سے سماجوادی کارکنان کا رشتہ اعظم گڑھ سے رہا ہے۔نیتا جی سے لیڈر سماج وادیوں کے ساتھ اعظم گڑھ کی عوام ہمیشہ سے کھڑی رہی ہے۔یہ اترپردیش ہے اور اترپردیش کی عوام بھارتیہ جنتا پارٹی کوہٹانا چاہتی ہے۔ خاص طور کسان نوجوان اور تاجرچھوٹی تعداد میں ہر طرح کے لوگ بھارتیہ جنتا پارٹی کو ہٹانا چاہتے ہیں۔ اور ہٹانے کے لئے سماج وادی پارٹی پوری طرح سے تیارہے۔سپریم کورٹ کی طرف سے زرعی قوانین پر مرکزی سرکار کو پڑی پھٹکار کے سوال کے جواب میں یادو نے کہا کہ سرکارکو فوراً بل واپس لے لینا چاہئے۔انہوں نے یہ کہاتھا کہ کسانوں کی آمدنی دوگنی ہوجائے گی۔اگر کسان ایم ایس پی مانگ رہے ہیں بھارتیہ جنتا پارٹی کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ ایم ایس پی دیں۔جس سے کسانوں کی آمدنی دوگنی ہوجائے اور کم سے کم میں آج سوامی وویکا نند کی جینتی ملک کا نوجوان ہر کوئی منا رہا ہے۔اس لئے جو بھی راستہ سوامی وویکانند نے دکھایاتھا وویکانند نے کہا کہ ہندوستان کی زمین پر مذاہب بہت ہیںلیکن یہاں کے لوگوں کو روٹی اورروزگار کی ضرورت ہے ۔جینتی کے دن سب سے بڑاحلف یہی ہوگاجو سرکار بنے وہ روزی روٹی دے اور روزگار کیسے ملے اس سمت میں کام کرنا ہوگا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper