ریاست

یوپی: آکسیجن کی کمی نہیں ہے افواہوں کو نظر انداز کریں: نونیت سہگل

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network | Uttar Pradesh (Lucknow)  on 15-April-2021

لکھنؤ: ، 15 اپریل ۔ اتر پردیش کے ایڈیشنل چیف سکریٹری ‘ انفارمیشن’ نونیت سہگل نے جمعرات کے روز لوک بھون میں بتایا کہ ریاست میں آکسیجن کی کوئی کمی نہیں ہے ، افواہوں کو نظر انداز نہ کریں۔ انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ یوگی کی رہنمائی میں حکمت عملی کا مسلسل جائزہ لیا جارہا ہے۔ انہوں نے کووڈ۔19 کے ٹیسٹ میں اضافہ کرنے کی ہدایت دی ہے۔ جناب سہگل نے بتایا کہ آج 02 لاکھ ٹیسٹ ہوئے ، جس میں اضافہ کرکے 2.50 لاکھ کیا جارہا ہے۔ آج ، تقریبا 80 ہزار آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کروائے گئے ہیں ، جن کوبڑاھاکر روزانہ 1.50 لاکھ ٹیسٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ، وزیر اعلیٰ نے تمام ضلع مجسٹریٹوں کو بھی ہدایت دی ہے کہ نجی لیبز کی استعداد میں اضافہ کرتے ہوئے زیادہ سے زیادہ ٹیسٹ کروائے جائیں۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ کی جائزہ میٹنگ میں کہا کہ عام لوگوں کو افواہوں سے گریز کرنا چاہئے۔ ریاست میں آکسیجن کی مناسب فراہمی ہے۔ آکسیجن کی فراہمی کے لئے ایک کنٹرول روم بنایا گیا ہے۔ آکسیجن کی مسلسل فراہمی کا جائزہ لیا جارہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آکسیجن کی فراہمی کرنے والی تمام فیکٹریوں کے ساتھ ہم آہنگی قائم کرکے ریاست میں آکسیجن کی فراہمی کی جارہی ہے۔ احمد آباد سے 25 ہزار ٹیکہ منگواے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ ، مزید کوششیں کی جارہی ہیں کہ اگر ملک میں کہیں بھی ریمیڈیسیور انجیکشن دستیاب ہے تو ، منگواے یں گے۔ کے جی ایم یو اور بلرام پور اسپتال کو مکمل کووڈ اسپتال میں تبدیل کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ جب دونوں اسپتال کووڈ اسپتال میں تبدیل ہوجایں گے تو لکھنؤ میں 2500 سے 3000 بیڈز کا بندوبست ہو جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی پریاگراج ، گورکھپور ، وارانسی اور کانپور میں بستروں کی تعداد بڑھانے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper