ریاست

بسوراج کی کرناٹک کے 23 ویںوزیر اعلیٰ کے طور پر حلف برداری

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

بنگلور،28جولائی – کرناٹک کے وزیر داخل بسوراج بومئی نے ریاست کے نئے وزیر اعلیٰ کے طور پر حلف اٹھا لیا ہے۔ منگل کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیجسلیچر پارٹی کی میٹںگ کے بعد بی جے پی کی مرکزی قیادت کے آبزرور مرکزی وزیر دھرمیندر پردھان نے بسوراج بومئی کے نام کا اعلان کیا تھا۔ بومئی کے وزیر اعلیٰ بننے کی تجویز خود، کارگزار وزیر اعلیٰ بی ایس یدی یورپا نے پیش کی تھی۔ابھی تک ملی جانکاری کے مطابق ریاستوں میں تین نائب وزیراعلیٰ بھی بنائے جا رہے ہیں۔ بی جے پی ذرائع کے مطابق، آر اشوک ، گووند کرجول اور بی شری راملو کو نائب وزیر اعلیٰ بنایا جاسکتا ہے۔ واضح رہے کہ آر اشوک، یدی یورپا حکومت میں وزیر محصولات تھے۔ وہیں گووند کرجول پہلے سے ہی نائب وزیر اعلیٰ کے عہدے پر تھے۔
اس کے ساتھ ہی شری راملو، کرناٹک حکومت میں سماجی فلاح وبہبود کے وزیر تھے۔حلف برداری تقریب سے قبل بسوراج بومئی نے کہا، اروند بیلاڈ اور مروگیش نرانی میرے دوست اور معاون ہیں۔ ہم ایک ٹیم کے طور پر کام کریں گے۔ لنگایت ووٹ بینک کے سوال پر بومئی نے کہا- ہم ایک قومی پارٹی ہیں اور سبھی طبقات کو ایک ساتھ لے جانا چاہتے ہیں۔ میری اولین ترجیح اقتصادی اور علاقائی عدم مساوات کو دور کرنا ہے۔ ایک بار اقتصادی عدم مساوت دور ہوجائے گی، تو سبھی موضوعات کا حل ہو جائے گا۔ میں چاہتا ہوں کہ سبھی طبقات کی ترقی ہو اور ریاست خوشحال ہو۔جنتا دل سے سیاسی کیریئر کی شروعات کرنے والے بسوراج بومئی سادر لنگایت طبقے سے آتے ہیں۔ بومئی کو یدی یورپا کا بے حد قریبی مانا جاتا ہے اور وہ میں وزیر داخلہ بھی رہ چکے ہیں۔ 28 جنوری 1960 کو پیدا ہوئے بسوراج بومئی کے والد ایس آر بومئی بھی کرناٹک کے وزیر اعلیٰ کے طور پر ریاست میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔
بسوراج بومئی نے سال 2008 میں بی جے پی کا دامن تھام لیا تھا۔ بی جے پی میں آنے کے بعد سے ان کا کیریئر تیزی سے آگے بڑھا۔ وہ پہلے ریاستی حکومت میں وزیر برائے آبی وسائل رہے ہیں۔ انہوں نے اپنے سیاسی کیریئر کا ا?غاز جنتا دل کے ساتھ کیا تھا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper