ریاست

کیجریوال حکومت نے شیخ سرائے میں اے پی جے اسکول کا انتظام سنبھالنے کا عمل شروع کیا

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 28 جولائی(سید شمیم احمد ) کیجریوال حکومت کے نظامت تعلیم نے دہلی کے شیخ سرائے، اپیجے اسکول کے انتظام کو سنبھالنے کے لئے شوکاز نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کیجریوال حکومت متعدد بار من مانی اضافہ فیس واپس لینے کے احکامات جاری کردیے ہیں، لیکن اے پی جے اسکول انتظامیہ ہر بار ان احکامات کی تعمیل میں ناکام رہی ہے۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اے پی جے اسکول کا انتظام سنبھالنے کے لئے نظامت تعلیم کی تجویز کی منظوری دے دی ہے۔ اب یہ فائل LG کو ارسال کردی گئی ہے۔ نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے والدین کو یقین دلایا ہے کہ دہلی حکومت ہمیشہ ان کے ساتھ کھڑی رہے گی اور کسی بھی قسم کی ناانصافی نہیں ہونے دے گی۔
ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن نے 2012-15ء سے 2018-2019ء کے مالی سالوں کے لئے اے پی جے اسکول کے مالی بیانات کا گہرائی سے معائنہ کیا تھا۔ ریکارڈوں کے تفصیلی معائنے کے دوران، محکمہ سے پتا چلا کہ سال 2018-2019 کے اسکول کے ساتھ کل رقم586 49,72,45روپے ہے۔ اس رقم میں سے,87,02,422 18روپے خرچ ہونے کا تخمینہ لگایا گیا تھا۔,87,02,422 18روپے خرچ کرنے کے بعد بھی ، اسکول انتظامیہ کے پاس,85,43,164 30روپے کا خالص زائد تھا۔ اس کے بعد محکمہ اس نتیجے پر پہنچا کہ اسکول انتظامیہ کو ابھی فیسوں میں اضافے کی ضرورت نہیں ہے۔ اس سلسلے میں نظامت نے تعلیمی سیشن اسکول کی طرف سے تجویز کردہ فیس ڈھانچے کو قبول کرنے سے انکار کردیا۔
اس کے بعد ، ڈائریکٹوریٹ نے اسکول کو ایک نوٹس جاری کرتے ہوئے پوچھا کہ اسکول کی پہچان منسوخ کیوں نہیں کی جائے یا حکومت اسکول کی انتظامیہ کو کیوں نہیں سنبھالے؟نظامت تعلیم نے اسکول کو متعدد نوٹسز جاری کیے تھے۔ اور بڑھتی ہوئی فیسوں کو جمع نہ کرنے اور اپنا جواب داخل کرنے کا حکم دیا تھا ، لیکن اسکول نے کوئی جواب نہیں دیا۔

ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن کے حکم کے خلاف اسکول نے ہائی کورٹ سے رجوع کیا ، لیکن ہائی کورٹ نے ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن کے حکم کی تائید کرتے ہوئے اسکول سے بڑھتی ہوئی فیس واپس لینے کا مطالبہ کیا۔ اس صورتحال کے پیش نظر، دہلی حکومت نے شیخ سرائے میں واقع اے پی جے اسکول کا انتظام سنبھالنے کا فیصلہ کیا ہے اور وزیر اعلی اروند کیجریوال نے نظامت تعلیم کی تجویز کو منظوری دے دی ہے۔ اب یہ فیصلہ ایل جی کو بھیج دیا گیا ہے۔ نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ کیجریوال حکومت کسی بھی قسم کی ناانصافی نہیں ہونے دے گی۔ ہم والدین کے ساتھ ہیں اور انہیں یقین دلاتے ہیں کہ ہم اس طرح کی ناانصافی کے خلاف ہمیشہ ان کے ساتھ کھڑے رہیں گے اور انہیں کسی بھی قسم کی مشکلات کا سامنا نہیں کرنے دیں گے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper