دنیا بھر سے

جنوبی کوریا نے گوگل پر 176.8 ملین ڈالر جرمانہ عائد کیا

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

سیول ، 15 ستمبر، جنوبی کوریا کے اینٹی ٹرسٹ ریگولیٹر نے منگل کو اعلان کیا کہ اس نے ٹیک کمپنی گوگل کو 207.4 بلین (1768 ملین ڈالر) جرمانہ عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جرمانہ موبائل آپریٹنگ سسٹم اور ایپ مارکیٹس میں اپنے تسلط کے مبینہ طور پر غلط استعمال پر عائد کیا گیا ہے۔
گوگل کا الزام ہے کہ جنوبی کوریا نے نظر انداز کیا ہے کہ اس کی سافٹ وئیر پالیسی کس طرح ہارڈ ویئر شراکت داروں اور صارفین کو فائدہ پہنچارہیہے۔ دریں اثنا ، جنوبی کوریا نے ترمیم شدہ ٹیلی کمیونیکیشن قانون کا نفاذ شروع کر دیا ہے۔
ریگولیٹر کا کہنا ہے کہ گوگل نے اسمارٹ فون بنانے والوں کو “اینٹی فریگ منٹشن معاہدے کیلئے مجبور کر کے مقابلہ میں ہیرا پھیری کی۔ اسمارٹ فون بنانے والوں کو ایپ سٹور لائسنس اور او ایس کی ابتدائی پہنچ پر گوگل کے ساتھ اے ایف اے معاہدے پر دستخط کرنا ہوں گے۔”
جنوبی کوریا کے فیئر ٹریڈ کمیشن کے چیئرمین جوہ سنگ ووک نے کہا کہ گوگل 2011 سے اپنے الیکٹرانک شراکت داروں کو اینٹی فریگ مینٹیشن معاہدوں پر دستخط کرنے پر مجبور کر رہا ہے۔ اس نے کمپنیوں کو گوگل کے ترمیم شدہ آپریٹنگ سسٹم کو اسمارٹ فونز یا اسمارٹ واچز میں ڈالنے سے روک دیا۔ اس کے نتیجے میں ، گوگل آسانی سے موبائل سافٹ وئیر اور ایپ مارکیٹ پر حاوی ہو گیا۔
قابل ذکر بات یہ ہے کہ بھارت کی اینٹی ٹرسٹ باڈی نے گذشتہ سال ان الزامات کی تحقیقات کا حکم دیا تھا کہ گوگل اپنی ادائیگی ایپس کو فروغ دینے کے لیے اپنی مارکیٹ کی پوزیشن کا غلط استعمال کر رہا تھا اور ایپ ساتھ ہی ایپ ڈویلپرز کو اپنے ان ایپ میں ادائیگی کے نظام کو استعمال کرنے کی اجازت دے رہا تھا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper