کھیل

نیرج چوپڑا کے جرمن کو چ کو اے ایف آئی نے معطل کیا

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی ، 14ستمبر۔ٹوکیو اولمپکس میں طلائی تمغہ جیت کر تاریخ رقم کرنے والے ہندوستان کے جیولن تھروور نیرج چوپڑا کے جرمن کوچ اوئے ہان کو ایتھلیٹکس فیڈریشن آف انڈیا (اے ایف آئی) نے معطل کردیا گیا ہے۔ ٹوکیو اولمپکس میں ہندوستان کو سونے کا تمغہ دلانے میں اہم کردار ادا کرنے والے اوئے ہان نے اے ایف آئی کے سامنے کئی ڈیمان رکھی تھیں۔ ان میں تنخواہ میں 50 فیصد اضافے سے لے کر تنخواہ میں ٹیکس چھوٹ کے ساتھ ساتھ فلائٹ میں سفر کے لیے فرسٹ کلاس ٹکٹوں کی مانگ تک شامل تھی۔حالانکہ اے ایف آئی کا کہنا ہے کہ ہان سے اس لئے ناطہ توڑ لیا گیا ہے۔
کیونکہ فیڈریشن ان کے کام سے خوش نہیں تھا۔ فیڈریشن کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اے ایف آئی ان کے کام سے خوش نہیں ہے اور جلد ہی دو نئے غیر ملکی کوچز کی تقرر ی کی جائے گی۔ 59 سالہ ہان کا معاہدہ صرف ٹوکیو اولمپکس تک تھا۔ اے ایف آئی کے صدر عادل سماری والا نے کہا ، “ہم دو نئے کوچ لا رہے ہیں۔
اور اوئے ہان کو بدل کر رہے ہیں کیونکہ ہم ان کے کام سے خوش نہیں ہیں۔ ہم تور (شاٹ پٹ کھلاڑی تیجندر پال سنگھ تور) کے لیے بھی ایک غیر ملکی کوچ کی بھی تلاش کر رہے ہیں‘‘۔
نیرج چوپڑا کے علاوہ سری شنکر کے کوچ کو بھی معطل کردیا گیا ہے کیونکہ شنکر کے کوچ نے اے ایف آئی کو تحریری طور پر دیا تھا کہ سری شنکر کم از کم ٹوکیو میں کوالیفیکیشن پرفارمنس کو دہرائیں گے۔ اس کے بعد اے اے ایف آئی نے انہیں اولمپکس میں شرکت کی اجازت دے دی تھی ، لیکن سری شنکر نے ٹوکیو گیمس میں اپنی بدترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ اوئے ہان کو نومبر 2017 میں ایک سال کے معاہدے پر مقرر کیا گیا تھا۔ تب انہیں نیرج چوپڑا ، شیو پال سنگھ اور انو رانی کی تربیت کی ذمہ داری دی گئی تھی۔ 2018 کامن ویلتھ گیمس میں ، نیرج نے ہان کی رہنمائی میں طلائی کاتمغہ جیتاتھا لیکن پھر وہ جرمنی کے ہی کلاوش بارٹونیز کے ساتھ چلے گئے تھے۔ ٹوکیو اولمپکس سے عین قبل اوئے ہان نے یہ کہہ کر تنازعہ کھڑا کر دیاتھا کہ انہیں سائی اور اے ایف آئی نے پر دستخط کرنے کے لیے بلیک میل کیا تھا۔ نیرج نے اولمپکس میں جیولین تھرو کے فائنل ایونٹ میں 87.58 میٹر کا تھروکرکے کر ٹریک اینڈ فیلڈ میں ملک کا پہلا تمغہ جیتاتھا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper