فن فنکار

آریان کو گرفتار کرنیوالے این سی بی آفیسر کا پولیس پر جاسوسی کا الزام

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

ممبئی،۱۴؍اکتوبر- بالی ووڈکے بادشاہ شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان کو گرفتار کرنے والے این سی بی آفیسر نے الزام لگایا ہے کہ ان کی جاسوسی کی جا رہی ہے۔میڈیا کے مطابق نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کے زونل ڈائریکٹر سمیر واکھنڈے جنہوں نے آریان خان کو منشیات کیس میں گرفتار کیا تھا۔
انہوں نے پولیس میں شکایت درج کرائی ہے جس میں انہوں نے الزام لگا یا ہے کہ پچھلے کچھ دنوں سے ان کا اور ان کے ساتھیوں کا پیچھا کیا جارہا ہے۔واکھنڈے نے ان کی جاسوسی کرنے کے لیے ممبئی کے اوشیوارا پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی ہے تاہم انہوں نے اس بارے میں مزید تفصیلات نہیں بتائیں۔رپورٹس کے مطابق واکھنڈے کا کہنا ہے کہ پچھلے دو دنوں سے وہ اور ان کے ساتھی سادہ کپڑوں میں ملبوس افراد کی نگرانی میں ہیں۔ انہوں نے مبینہ طور پر الزام لگایا ہے کہ چند پولیس اہلکار سادہ لباس میں ان کا پیچھا کررہے ہیں۔
بہرحال ممبئی پولیس نے اس کیس کے بارے میں ہونے والی پیشرفت سے متعلق مزید تفصیلات جاری نہیں کیں۔ایک نیوز ایجنسی نے این سی بی کے ایک عہدیدار کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ اوشیوارا پولیس اسٹیشن سے واکھنڈے کے پیچھے دو آدمی اس قبرستان تک گئے جہاں واکھنڈے کی والدہ دفن ہیں۔
اس کے علاوہ سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعے بھی واکھنڈے کی نقل و حرکت پر نظر رکھی جارہی ہے۔واضح رہے کہ سمیر واکھنڈے بھارت کے کئی ہائی پروفائل کیسز میں شامل رہے ہیں جن میں اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کا کیس بھی شامل ہے۔حال ہی میں واکھنڈے اور ان کی ٹیم اس وقت منظرعام پر آئی جب انہوں نے ممبئی سے گووا جانے والے ایک بحری جہاز پر چھاپہ مارکر منشیات برآمد کی۔ اس جہاز پر شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان بھی موجود تھے جنہیں پوچھ تاچھ کے بعد چھاپے کے اگلے روز گرفتار کیا گیا۔آریان کی گرفتاری کے بعد یہ کیس ہائی پروفائل کیس بن گیا ہے۔ تاہم اس کیس میں آریان خان کی گرفتاری کو لے کر این سی بی پر کئی سوالات بھی اٹھائے جارہے ہیں اور ایک بھارتی سیاسی جماعت کا کہنا ہے کہ منشیات کیس میں آریان کوجان بوجھ کر پھنسایا جارہا ہے۔ انہوں نے آریان خان کی گرفتاری کو حکمران جماعت بی جے پی کی سازش قرار دیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper