کھیل

سٹوئنس کو تیسرے نمبر پر بھیجنا درست فیصلہ تھا: رکی پونٹنگ

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

شارجہ ، 14 اکتوبر۔ دہلی کیپیٹلز (ڈی سی) کے ہیڈ کوچ رکی پونٹنگ کو لگتا ہے کہ بدھ کو کولکاتہ نائٹ رائیڈرز (کے کے آر) کے خلاف آسٹریلیائی ہرفن مولا کھلاڑی مارکس اسٹوئنس کو تیسرے نمبر پر بھیجنا درست فیصلہ تھا۔ اسٹوئنس نے بدھ کو انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) 2021 کے متحدہ عرب امارات لیگ میں اپنا پہلا میچ کھیلا۔ کے کے آر کے خلاف انہیں بیٹنگ آرڈر میں تیسرے نمبر پر بھیجا گیا ، لیکن وہ زیادہ کچھ نہ کر سکے اور 23 گیندوں پر محض 18 رنز بنائے۔میچ کے بعد پریس کانفرنس کے دوران ، پونٹنگ نے کہا ، “ہم نے مارکس کے سلسلے میں کافی غور کیا تھا کہ انہیں کس سلسلے میں آرڈر پر بلے بازی کے لئے بھیجا جائے ، جیسا کہ ہم تمام جانتے ہیں وہ ہیمسٹنگ کی چوٹ کے ساتھ تقریباً تین ہفتے سے میدان سے باہر تھے ہم انہیں آج ٹیم میں واپس لانا چاہتے تھے کیونکہ ہم جانتے تھے کہ وہ ٹاپ آرڈر پر بلے بازی کرنے کے علاوہ ڈیتھ اوور وں میں بھی جارحانہ شاٹ کھیل سکتے ہیں۔
سابق آسٹریلوی کپتان نے یہ بھی بتایا کہ کیسے بھارتی کھلاڑیوں نے کے کے آر کے خلاف کوالیفائر 2میں اسکور کرے کے لئے جدو جہد کی ۔ پونٹنگ نے کہا ، “جیسا کہ آپ نے دیکھا ہے ، پچ پر کسی بھی نئے بلے باز کے لیے آنا اور شروع کرنا واقعی مشکل ہے۔ یہاں تک کہ ٹاپ پر شیکھر بھی جارحانہ انداز میں بیٹنگ نہیں کر سکے جس کی ان سے توقع تھی۔ انہوں نے مزید کہا ، مڈل آرڈر میں ہندوستانی کھلاڑیوں نے بھی اس سطح پر پہنچنے کے لیے جدوجہد کی۔ اس لیے ، میں سمجھتا ہوں کہ یہ صحیح فیصلہ تھا۔ شاید ہمیں وہ نتیجہ نہیں ملا جس کی ہم تلاش کر رہے تھے۔”بتادیں کہ اس میچ میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے دہلی کیپیٹلز کی ٹیم نے 20 اوورز میں 5 وکٹوں پر 135 رنز بنائے۔
جواب میں کے کے آر نے 19.5 اوورز میں 7 وکٹوں پر 136 رنز بنا کر میچ جیت لیا۔ آخری اوور تک چلے اس میچ میں راہل ترپاٹھی نے کے کے آر کے فائنل کا ٹکٹ لگاتار چھ چھکوں سے کٹا لیا۔ وینکٹیش ایئر نے 55 رنز کی شاندار اننگز کھیلی اور اس کے لیے انہیں مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper