ملک بھر سے

مکیش امبانی کی بادشاہت کو گوتم اڈانی نے چیلنج کیا ۔

Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی ، 25 نومبر۔ اڈانی گروپ کے سربراہ اور ہندوستان کے دوسرے سب سے امیر ترین تاجر گوتم اڈانی ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ (RIL) کے چیئرمین اور ایشیا کے سب سے امیر آدمی مکیش امبانی کی بادشاہت کو چیلنج کر رہے ہیں۔ دولت کے معاملے میں وہ مکیش امبانی کے بہت قریب آچکے ہیں۔ اڈانی کسی بھی وقت مکیش امبانی کو پیچھے چھوڑتے ہوئے ایشیا کے سب سے امیر ارب پتی بن سکتے ہیں۔
بلومبرگ بلینیئرز انڈیکس کے مطابق، مکیش امبانی کی کل مالیت جمعرات کو کم ہو کر 89.7 بلین ڈالر (تقریباً 6.68 لاکھ کروڑ روپے) پر آ گئی ہے۔ وہیں، گوتم اڈانی کی دولت میں (روپے 6.64 لاکھ کروڑ ) 89.1 $ بلین کا اضافہ ہواہے۔ دراصل مکیش امبانی کی دولت میں 1.32 بلین ڈالر (تقریباً 9,841 کروڑ روپے) کی کمی ہوئی ہے ، جب کہ گوتم اڈانی کی دولت میں 375 ملین ڈالر (تقریباً 2795 کروڑ روپے) کا اضافہ ہوا ہے۔ تاہم، مکیش امبانی بدستور امیر ترین اور ایشیا کے 12ویں امیر ترین آدمی ہیں۔
یہ سعودی آرامکوکی مجوزہ 15 ارب $ معاہدے سے دستبرداری کی وجہ سے ہواہے، مکیش امبانی کی مجموعی مالیت1.32 ارب $کم ہو گئی ہے ۔ حالانکہ ریلائنس انڈسٹریز کے حصص میں اس سال ان کی مجموعی مالیت میں 13 ارب $ کا اضافہ ہوا ہے۔
آپ کو بتا دیں کہ کئی میڈیا رپورٹس میں ایسی خبریں بھی آئی تھیں کہ گوتم اڈانی نے مکیش امبانی کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ لیکن بلومبرگ کی رپورٹ سے صاف ظاہر ہے کہ گوتم اڈانی اب بھی پیچھے ہیں۔ بلومبرگ روزانہ کی بنیاد پر انڈیکس شائع کرتا ہے ، جس کی رپورٹ کو مستند سمجھا جاتا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper

Taasir Newspaper