ملک بھر سے

نم آنکھوں سے سی ڈی ایس کی آخری رسومات ادا

Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 10 دسمبر – ملک کے پہلے سی ڈی ایس جنرل بپن راوت اور ان کی اہلیہ مدھولیکا کی آخری رسومات جمعہ کی شام برار اسکوائر شمشان گھاٹ میں ادا کی گئیں۔ آخری سفر کے دوران راستے بھر لوگوں کا ہجوم ترنگا لے کر چلا ۔ راوت اور ان کی اہلیہ کو فوجی اعزاز کے ساتھ 17 توپوں کی سلامی دے کر آخری سفر کے لیے روانہ کیا گیا۔ ان کی آخری رسومات کے تمام انتظامات اسی گورکھا رائفلز کے یونٹ 5/11 نے سنبھالے تھے۔
جہاں سے جنرل راوت نے اپنے فوجی سفر کا آغاز کیا تھا۔ فوج میں شمولیت کے بعد اس یونٹ میں کمیشن حاصل کیا اور مرتے دم تک ان کی وردی پر ان گنت تمغے سجے رہے۔قبل ازیں، ملک کے تمام لیڈروں، فوجی افسران، معززین اور غیر ملکی مسلح افواج کے افسران نے جنرل راوت کی سرکاری رہائش گاہ پر خراج عقیدت اور گلہائے عقیدت پیش کئے ۔ برار اسکوائر شمشان تک آخری سفر کے دوران لوگوں کا ہجوم تھا۔ سینکڑوں لوگ ترنگا اٹھائے ہوئے اور ان کی جسد خاکی کے ساتھ چل رہے تھے۔ سڑکوں پر جگہ جگہ ہورڈنگس لگا دیے گئے تھے۔ شمشان گھاٹ تک سارا راستہ لوگ سی ڈی ایس بپن راوت امر رہےکے نعرے لگاتے رہے۔ اس دوران لوگوں نے نہ صرف پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں بلکہ بھارت ماتا کی جے کے نعرے بھی لگائے۔ دہلی کے شہریوں نے جب تک سورج چاند رہے گا، بپن جی کا نام رہے گا کے نعرے لگائے۔ جب آخری سفر شمشان گھاٹ پہنچا تو راوت اور ان کی اہلیہ کی لاشوں غمگین ماحول میں فوجی گاڑی سے اٹھایا گیا۔شمشان گھاٹ پر ایک بار پھر سی ڈی ایس کو خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ شروع ہوا۔ صدر رام ناتھ کووند، ہندوستانی مسلح افواج کے سپریم کمانڈر، وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، آرمی چیف جنرل ایم ایم نرو نے، بحریہ کے سربراہ ایڈمرل آر۔
ہری کمار اور فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل وی آر چودھری، دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے خراج عقیدت پیش کیا۔
جنرل راوت کی میت کو تینوں آرمی چیفس نے آخری رسومات کے لیے کندھا دیا اور بھارتی مسلح افواج کے بینڈ دستے نے ماتمی موسیقی بجائیں۔ اس کے بعد راوت اور ان کی اہلیہ کی لاش ایک ہی چتا پر رکھ دی گئیں۔دونوں بیٹیاں کریتکا اور تارینی نے والدینکی مذہبی رسومات ادا کیں۔ آخری رسوم سے قبل فوجی پروٹوکول کے مطابق 17 توپوں کی سلامی دی گئی۔اس کے بعد جنرل راوت کی دونوں بیٹیوں نے اپنے والدین کی چتا کو مکھ اگنی دی۔دریںاثنا 8 دسمبر کو تمل ناڈو کے کنور میں ہوئے ہیلی کاپٹر حادثے میں سی ڈی ایس راوت، ان کی اہلیہ مدھولیکا راوت اور 11 فوجی اہلکاروں کی موت سے پورے ملک صدمے میں ڈوبا ہوا ہے۔ جمعہ کی ۔ صبح سے ہی جنرل راوت اور ان کی اہلیہ مدھولیکا کو خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ سب سے پہلے راوت جوڑے کی بیٹیوں کریتکا ، تارینی اور دیگر رشتہ داروں نے ہنس کر خراج عقیدت پیش کیا۔ اس کے بعد دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل ، دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال ، وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر، وزیر داخلہ امت شاہ، مرکزی وزراء نرملا سیتارمن، منسکھ مانڈویا، سمرتی ایرانی اور سربانند سونوال ان کی رہائش گاہ پر خراج عقیدت پیش کیا۔

چیف جسٹس آف انڈیا این وی رمنا ، اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ ، بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا ، اتراکھنڈ کے وزیر اعلیٰ پشکر سنگھ دھامی ، بی جے پی لیڈر روی شنکر پرساد ، کانگریس کے سینئر لیڈر ہریش سنگھ راوت ، بھارتیہ کسان یونین (بی کے یو) کے رہنما راکیش ٹکیت ، ڈی ایم کے لیڈر اے راجہ اور کنی موزی ، کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے اور سابق وزیر دفاع اے کے انٹونی ، کانگریس لیڈر راہل گاندھی گلہائے عقیدت پیش کرنے پہنچے۔ مذہبی رہنماؤں نے جنرل راوت اور ان کی اہلیہ مدھولیکا راوت کیلئے دعائیں کیں۔

About the author

Taasir Newspaper