سیاست

بی جے پی نے کارپوریشن انتخابات ملتوی کرکے شہیدوں کی توہین کی:کیجریوال

Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی،23مارچ :مرکزی حکومت کے دہلی میونسپل کارپوریشن کے انضمام کے فیصلے کے بعد وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بی جے پی کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر آپ میں ہمت ہے تو وقت پر ایم سی ڈی الیکشن کر کے اور جیت کر دکھائیں، ہم سیاست چھوڑ دیں گے۔یوم شہدا کے موقع پر اروند کیجریوال نے کہا کہ پچھلے کچھ دنوں سے جو کچھ نظر آ رہا ہے وہ ایک طرح سے شہیدوں کی قربانی کی توہین ہے۔ مرکز میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت دہلی میں بلدیاتی انتخابات کو ملتوی کر رہی ہے۔ سب جانتے ہیں کہ اس بار بی جے پی کا صفایا ہونے والا تھا اور اپنی شکست سے بچنے کے لئے اس نے پہلے ریاستی الیکشن کمیشن پر الیکشن ملتوی کرانے کیلئے دباؤ ڈالا اور اب ایسی ترمیم لا رہے ہیں، جس کے ذریعے الیکشن کو کئی مہینوں تک ملتوی مؤخر کر دیا جائے، یہ بہت افسوسناک ہے۔
اروند کیجریوال نے مزید کہا کہ اگر اس ملک کے اندر الیکشن نہیں ہوں گے تو جمہوریت کیسے بچے گی، عوام کی آواز کیسے بچ سکے گی! آج سب سے زیادہ تکلیف بھگت سنگھ کی روح کو ہو رہی ہوگی، جنہوں نے پھانسی پر چڑھ کر اس ملک کو آزاد کرایا۔ کیا انہوں نے ملک کو اس دن کے لئے آزاد کرایا تھا کہ حکومت آئے گی اور الیکشن ہی ختم کر دے گی؟ اس ملک کے اندر عوام کو حکومت کا انتخاب کرنے کا بنیادی حق حاصل ہے۔مرکزی حکومت سے اپیل کرتے ہوئے اروند کیجریوال نے کہا کہ ہار جیت ہوتی رہتی ہے، آج آپ کسی ریاست میں جیت رہے ہیں، کسی ریاست میں کوئی اور جیت رہا ہے۔ چھوٹے سے ایم سی ڈی کے الیکشن میں اپنی شکست سے بچنے کے لئے اس ملک کے ساتھ مت کھیلو، شہدا کی شہادت اور آئین سے مت کھیلو!بی جے پی پر نشانہ لگاتے ہوئے اروند کیجریوال نے کہا کہ آج کہہ رہے ہیں کہ ہمیں تین میونسپل کارپوریشنوں کو متحد کرنا ہے، اس لئے انتخابات کو ملتوی کر رہے ہیں۔ کیا اس بنیاد پر انتخابات ملتوی ہو سکتے ہیں؟ کل گجرات میں الیکشن ہوں گے اور وہ مرکزی الیکشن کمیشن کو خط لکھیں گے کہ وہ گجرات اور مہاراشٹر کو ایک کرنے جا رہے ہیں، اس لئے گجرات میں الیکشن نہ کروائے جائیں۔ اگلی بار لوک سبھا کے انتخابات ہوں گے اور اس میں بھارتیہ جنتا پارٹی ہار رہی ہے تو مرکزی الیکشن کمیشن کو خط لکھا جائے گا کہ وہ پارلیمانی نظام کو ختم کرکے صدارتی نظام لانے جا رہے ہیں، اس لئے انتخابات نہ کرائے جائیں!انہوں نے کہا کہ بی جے پی خود کو دنیا کی سب سے بڑی پارٹی کہتی ہے، سب سے بڑی پارٹی دہلی میں چھوٹی پارٹی سے خوفزدہ ہو گئی! دہلی کے ایک چھوٹے سے الیکشن سے گھبرا گئی۔میں بی جے پی کو چیلنج کرتا ہوں، اگر آپ میں ہمت ہے تو وقت پر ایم سی ڈی الیکشن کرائیں اور جیت کر دکھائیں، ہم سیاست چھوڑ دیں گے۔ اسمبلی اجلاس کے بعد احاطے میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ شہید اعظم بھگت سنگھ، راج گرو اور سکھ دیو جی، تینوں کو اس دن پھانسی دی گئی تھی۔ ان لوگوں نے ملک کو آزاد کرانے کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا تھا۔ انہوں نے ملک کو آزاد کرانے کے لیے اپنی عظیم قربانی دی۔ ملک آزاد ہوا اور آئین بنا۔ آئین میں تمام اختیارات عوام کو دیئے گئے تھے کہ عوام اپنی حکومتوں کا انتخاب کریں گے اور وہ حکومتیں عوام کے خواب پورے کریں گی۔

About the author

Taasir Newspaper