ملک بھر سے

ریمس میں این آئی اے ، ڈاکٹر اور نرس کے درمیان ہاتھا پائی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network / Mosherraf

رانچی، 22 مئی (ہ س)۔ اتوار کو دارالحکومت رانچی میں واقع اسپتال میں این آئی اے، ڈاکٹر اور نرس کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ریمس کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر ہیرن بروا د ل بل کے ساتھ قیدی وارڈ پہنچے۔ انہوں نے ڈیوٹی پر موجود نرس اور یہاں تعینات فوجیوں سے پوچھ گچھ کی۔اس سلسلے میں موصولہ اطلاع کے مطابق این آئی اے کے اہلکار ہفتہ کی شام کو ہزاری باغ جیل سے جنگجو رادھے شیام عرف ومل یادو کے ساتھ ریمس پہنچے تھے۔ وہ 25 لاکھ کا انعامی مائوسٹ ہے۔ اس کا علاج RIMS کے قیدی وارڈ میں کیا جا رہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ این آئی اے افسران آن ڈیوٹی نرس سے بی پی ٹیسٹ کرانے کو کہہ رہے تھے۔ بی پی کی جانچ میں تاخیر ہوئی، جس کے بعد این آئی اے افسر نے موبائل پر ویڈیو ریکارڈ کرنا شروع کیا۔ یہ بات آن ڈیوٹی نرس اور ڈاکٹر تک پہنچ گئی۔الزام ہے کہ انہوں نے این آئی اے افسر کا موبائل فون چھین لیا۔ اس کے بعد معاملہ زور پکڑ گیا۔ اس سلسلے میں RIMS کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر ہیرن بروا نے کہا کہ واقعہ کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ این آئی اے افسر اور ڈیوٹی پر مامور ڈاکٹر کے درمیان جھگڑا ہوہے۔ فی الحال تو معاملہ حل ہو گیا ہے۔ واقعہ کی مکمل تفصیلات محکمہ پولیس کے اعلیٰ حکام کو بھی دے دی گئی ہیں۔

About the author

Taasir Newspaper