ملک بھر سے

برکس ممالک کے درمیان تعا ون سے عوامی زندگیوں میں تبدیلیاں آئیں : مودی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Mosherraf-23 June

نئی دہلی،23 جون: پی ایم مودی نے کہا ہے کہ برکس ممالک کے درمیان باہمی تعاون سے ان ممالک کے شہریوں کی زندگیوں میں تبدیلیاں آئیں ہیں اور یہ تعاون دنیا کو پیدا ہونے والی کووڈ صورتحال سے نکالنے میں بھی اہم کردار ادا کر سکتا ہے جمعرات کو چودھویں برکس چوٹی کانفرنس سے ورچول میڈیم سے خطاب کرتے ہوئے پی ایم مودی نے کہاکہ ہم برکس کے رکن ممالک عالمی معیشت کی حکمرانی کے بارے میں بہت یکساں خیالات رکھتے ہیں اور اس طرح ہمارا باہمی تعاون کووڈ کے بعد کی عالمی بحالی میں مفید کردار ادا کر سکتا ہے۔برکس کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ گزشتہ سالوں میں ہم نے برکس میں کئی ادارہ جاتی اصلاحات کی ہیں، جس سے اس تنظیم کی تاثیر میں اضافہ ہوا ہے۔ یہ بھی خوشی کی بات ہے کہ ہمارے نئے ترقی پذیر بینک کی ممبر شپ میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ بہت سے شعبے ایسے ہیں جہاں ہمارا باہمی تعاون براہ راست ہمارے شہریوں کی زندگیوں کو فائدہ پہنچا رہا ہے۔ جیسے ویکسی آر اینڈ ڈی کا قیام، کسٹم محکموں کے درمیان ہم آہنگی، مشترکہ سیٹلائٹس کا قیام، فارما مصنوعات کی باہمی شناخت وغیرہ۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے عملی اقدامات برکس کو ایک منفرد بین الاقوامی تنظیم بناتے ہیں جس کی توجہ صرف بات چیت تک محدود نہیں ہے۔مسٹر مودی نے یوگا کے عالمی دن کے موقع پر تمام برکس ممالک میں منعقدہ شاندار تقریبات کے لیے رکن ممالک کو بھی مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر کووڈ وبا کا پھیلاؤ پہلے کے مقابلے میں کم ہوا ہے لیکن اس کے بہت سے مضر اثرات عالمی معیشت میں اب بھی نظر آرہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ برکس ممالک نے کھیلوں کی تقریبات اور یوتھ کانفرنسوں کے انعقاد کے ذریعے عوام سے عوام کے رابطوں کو مضبوط کرنے کے لیے کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ آج کی بحث ہمارے برکس تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کے لیے بہت سی تجاویز سامنے آئیں گی۔

About the author

Taasir Newspaper