دنیا بھر سے

پاکستان میں کرونا ایک بار پھر زور پکڑنے لگا، کراچی سب سے زیادہ متاثر

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Mosherraf- 28 June

کراچی ،28جون: پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی کی رہائشی 60 سالہ فاخرہ نمونیا کے مرض کے ساتھ اسپتال گئیں، جہاں ڈاکٹر نے انہیں کووڈ 19 ٹیسٹ کرانے کا کہا۔ٹیسٹ کی رپورٹ مثبت آئی تو انہیں وارڈ میں داخل کرلیا گیا لیکن بگڑتی ہوئی سانس کے باعث انہیں عباسی شہید اسپتال کے آئی سی یو وارڈ میں منتقل کردیا گیا۔فاخرہ اس سے قبل کرونا وائرس سے متاثر نہیں ہوئی تھیں لیکن اب وہ اس کا شکار ہوگئی ہیں اور ان کے بچے ان کی صحت میں بہتری کے منتظر ہیں۔محمد سیف ایک نجی کمپنی میں سیلز کی نوکری کرتے ہیں ،انہیں بھی گزشتہ ہفتے نزلے اور کھانسی کی شکایت ہوئی۔ معمول کی دوائیاں لینے کے باوجود جب انہیں آرام نہیں آیا تو وہ ڈاکٹر کے پاس سینے میں درد اورسانس لینے میں دشواری کی شکایت کے ساتھ گئے،جہاں انہیں بھی کووڈ 19 کا ٹیسٹ کرانے کو کہا گیا۔سیف کے مطابق جب کرونا کی وبا اپنے عروج پر تھی تو وہ تب اس سے محفوظ رہے ، تو پھر اس بار انہیں کرونا کیسے ہوسکتاتھا؟ لیکن رپورٹ کے مثبت آنے کے بعد ان کا یہ خدشہ غلط ہوا اور اب وہ گھر میں ہی قرنطینہ میں ہیں۔ ان کے گھر کے دیگر افراد کے بھی ٹیسٹ ہوچکے ہیں جو منفی آئے ہیں۔سیف کی طرح بہت سے لوگ یہ سمجھ رہے ہیں کہ اب کرونا کی وبا کا مکمل خاتمہ ہوچکا ہے۔اب زندگی تمام تر پابندیوں اور بندشوں سے آزاد ہے لیکن ایسا نہیں ہے۔اس وقت پاکستان میں ایک مرتبہ پھر کرونا زور پکڑ رہا ہے۔ ایسے وقت میں جہاں اب زندگی معمول کے مطابق ہے اور لوگ بنا ماسک کے گھوم رہے ہیں،دفاتر میں حاضری مکمل ہے، بازاروں میں رش ہے، ریستورانوں میں طویل انتظار ہے جب کہ جانوروں کی منڈیوں میں خریداروں کے سودے ہو رہے ہیں،سڑکوں، محلوں میں گہما گہمی ہے اور لوگ گھومتے دکھائی دے رہے ہیں۔ایسے میں پاکستان میں کرونا کے نگراں ادارے نیشنل کمانڈاینڈ آپریشنل سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے ملک بھر میں کرونا کے بڑھتے کیسز کے سبب اندرون ملک اور بیرون ِ ملک پروازوں اور بسوں میں سفر کرنے کے دوران ماسک پہننے کو لازمی قرار دیا گیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper